Wednesday, October 5, 2022

لاہور ہائیکورٹ نے پانچ بچے باپ سے لیکر ماں کے حوالے کر دیے

لاہور ہائیکورٹ نے پانچ بچے باپ سے لیکر ماں کے حوالے کر دیے
لاہور (92نیوز) لاہور ہائیکورٹ نے پانچ بچوں کو باپ سے واپس لے کر ماں کی تحویل میں دے دیا۔ بچے باپ کے ساتھ جانے پر ہی ضد کرتے رہے۔ تفصیلات کے مطابق جسٹس سردار شمیم نے اوکاڑہ کی امیر بی بی کی درخواست پر سماعت کی۔ درخواست میں امیر بی بی نے موقف اختیار کیا کہ اس کی شوہر اقبال سے دسمبر دو ہزار بارہ میں طلاق ہوگئی تھی جس کے بعد سابق شوہر نے پانچوں بچے اپنے پاس رکھ لیے اور اب بچوں سے ملاقات بھی نہیں کرنے دی جاتی۔ درخواست میں پانچوں بچوں کو باپ سے برآمد کرانے کی استدعا کی گئی۔ عدالت کے حکم پر تین لڑکیوں اور دو لڑکوں کو عدالت میں پیش کیا گیا۔ عدالت نے تمام ریکارڈ کا جائزہ لے کر پانچوں کو باپ سے واپس لے کر ماں کی تحویل میں دے دیا۔ جیسے ہی بچے عدالت سے باہر آئے تو انہوں نے باپ کے ساتھ جانے کی ضد کی اور باپ سے لپٹ گئے تاہم عدالتی حکم پرماں بچوں کو اپنے ساتھ لے گئی۔