Sunday, December 4, 2022

لاہور: نوجوان کو کچلنے والا ڈی ایس پی کا بیٹا آزاد، عدالتی حکم پر طلحہ کی ہتھکڑی کھل گئی

لاہور: نوجوان کو کچلنے والا ڈی ایس پی کا بیٹا آزاد، عدالتی حکم پر طلحہ کی ہتھکڑی کھل گئی
لاہور (92نیوز) لاہور میں نوجوان کو کار تلے کچلنے والا پولیس کے ڈی ایس پی کا گرفتار بیٹا رہا۔ لاہور کی مقامی عدالت نے پولیس کو حکم دیا ہے کہ ملزم کو عبوری ضمانت ختم ہونے تک گرفتار نہ کیا جائے۔ تفصیلات کے مطابق پچیس سالہ نوجوان بلال کو گاڑی تلے کچل کر ہلا ک کرنیوالے ڈی ایس پی نوید ارشاد کے بیٹے طلحہ کو ہتھکڑیاں لگا کر عدالت پیش کیا گیا۔ عدالت نے پولیس کی جانب سے ملزم کے جوڈیشل ریمانڈ کی استدعا مسترد کر دی اور پولیس کوفوری طور پر ملزم کی ہتھکڑیاں کھولنے کی ہدایت کی۔ جوڈیشل مجسٹریٹ نے پولیس کو حکم دیا کہ ملزم کو پانچ نومبر تک عبوری ضمانت ختم ہونے تک گرفتار نہ کیا جائے۔ عدالت سے رہائی سے قبل پولیس نے عدالت کو بتایا کہ ملزم نے اعتراف جرم کر لیاہے اس لئے جسمانی ریمانڈ کی ضرورت نہیں، ملزم کو جوڈیشل ریمانڈ پر بھیج دیا جائے۔ ملزم کے وکیل علی عمران نے جوڈیشل ریمانڈ کی مخالفت کی اور اعتراض اٹھایا کہ جو عبوری ضمانت پر ہو اسے نہ تو پولیس گرفتار کر سکتی ہے نہ ہی اسے جوڈیشل ریمانڈ پر بھیجا جا سکتا ہے۔ دوسری جانب متوفی کے بھائی رانا رمیض نے پولیس کی تفتیش پر عدم اعتماد کا اظہار کیا ہے اور کہا کہ انہیں انصاف چاہیے۔ عدالت نے طلحہ کو رہا ئی کے حکم کے ساتھ پولیس کو ملزم کو شامل تفتیش کرنے کی ہدایت کی۔