Friday, February 3, 2023

لاہور میں داتا دربار دھماکے کا ایک اور زخمی دم توڑ گیا ، شہدا کی تعداد 12 ہو گئی

لاہور میں داتا دربار دھماکے کا ایک اور زخمی دم توڑ گیا ، شہدا کی تعداد 12 ہو گئی
 لاہور (92 نیوز) لاہور میں داتا دربار دھماکے کا ایک اور زخمی دم توڑ گیا جس کے بعد شہدا کی تعداد 12 ہو گئی۔ لوہاری گیٹ کا رہائشی 19 سالہ مدثر میواسپتال میں زیر علاج تھا۔ گزشتہ روز داتا دربار لاہور دھماکے میں زخمی ایک اور پولیس اہلکار چل بسا ۔ دھماکے میں شہید ایک ہی خاندان کے تین افرادکی نماز جنازہ ملتان میں آبائی گاؤں بستی جھنڈے والا میں ادا کی گئی۔ دھماکے میں زخمی ہونے والا اہلکار صدام میو اسپتال میں دوران علاج دم توڑ گیا تھا ۔ دوسری جانب دھماکے میں شہید ہونے والے ملتان کے رہائشی محمد رفیق اس کا آٹھ سالہ بیٹا اور کزن مشتاق کی نماز جناز آبائی علاقے بستی جھنڈے والا وہاڑی روڈ  میں ادا کی گئی، جس میں علاقہ مکینوں کی بڑی تعداد نے شرکت کی۔
حرکات سے لگتا ہے حملہ آور کو نشہ آور انجکشن لگایاگیا تھا، انٹیلی جنس ذرائع
شہدا کو آہوں اور سسکیوں کے ساتھ سپرد خاک کیا گیا ، اس موقع پر رقعت آمیز مناظر دیکھنے میں آئے۔ اس سے پہلے شہید ہونے والے اہلکاروں کی نماز جنازہ پولیس لائنز میں ادا کی گئی، جس کے بعد انہیں پورے سرکاری اعزاز کے ساتھ آبائی علاقوں میں سپرد خاک کیا گیا۔ حملے کی سی سی ٹی وی فوٹیج کے ذریعے تحقیقات جاری ہیں ، حملہ آور کےاعضا فرانزک ایجنسی کو بھجوا دئیے گئے ہیں، دوسری طرف دھماکے کے بعد لاہورکے تمام اہم مقامات کی سکیورٹی بڑھا دی گئی ہے، تمام بڑی مساجد اور امام بارگاہوں کے باہر اضافی نفری تعینات کی گئی ہے۔ ادھرمبینہ خودکش حملہ آور کی شناخت معمہ بن گئی ہے۔ دھماکا مبینہ خودکش حملہ آور کی مخالف سمت میں ہوا۔ سیف سٹی کیمرے کی فوٹیج نے معاملہ الجھا دیا۔ علاوہ ازیں وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے میو اسپتال میں زخمیوں کی عیادت کی۔