Thursday, October 6, 2022

لاہور: مال روڈ سے دھرنا ختم ہونے پر شہریوں نے بھی سکھ کا سانس لیا

لاہور: مال روڈ سے دھرنا ختم ہونے پر شہریوں نے بھی سکھ کا سانس لیا

لاہور (92 نیوز) لاہور مال روڈ سے دھرنا ختم ہوا تو شہریوں نے بھی سکھ کا سانس لیا اور کہا کہ حکومت کو دھرنوں سے قبل ہی مذاکرات شروع کرنے چاہیے تھے تاکہ شہریوں کو مشکلات کا سامنا نہ کرنا پڑتا۔
تحریک لبیک یا رسول اللہﷺ کے دھرنے کے باعث مال روڈ چیئرنگ کراس سات روز بند رہی۔ فریقین میں مذاکرات کے کئی دور ہوئے جو نا کام رہے۔
گزشتہ رات پنجاب حکومت نے علما کرام کے مطالبات مان لئے جس کے بعد دھرنا ختم ہونے کا اعلان ہوا اور مال روڈ پر ٹریفک بحال ہوئی۔
شہریوں نے ایک جانب تو معاہدہ ہونے پر خوشی کا اظہار کیا تو دوسری جانب انہوں نے کہا کہ اب کلچر ہی ایسا ہے کہ بغیر احتجاج اور دھرنے کے حکومت سنتی ہی نہیں۔
شہریوں نے کہا کہ حکومت کو دھرنا شروع ہونے سے قبل ہی معاملات کو پرکھ لینا چاہئے اور عوام کی مشکلات کو مد نظر رکھنا چاہیے۔
شہریوں نے حکومتی پالیسیوں پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ سات روز مال روڈ بند رہنے سے کاروبار تباہ ہو گیا۔ سڑک کے ایک جانب سے دوسری طرف جانے کے لئے کئی کلومیٹر کا فاصلہ طے کرنا پڑتا تھا۔ کوشش ہونی چاہئے کہ عوام پریشان نہ ہوں۔