Thursday, January 20, 2022
براہراست ٹی وی براہراست نشریات(UK) آج کا اخبار English News
English News آج کا اخبار
براہراست ٹی وی براہراست نشریات(UK)

قومی اسمبلی کا اجلاس ایک بارپھر حکومتی اور اپوزیشن ارکان کے شورشرابے کی نذر

قومی اسمبلی کا اجلاس ایک بارپھر حکومتی اور اپوزیشن ارکان کے شورشرابے کی نذر
December 19, 2016

 اسلام آباد(92نیوز)قومی اسمبلی کا اجلاس  ایک بار پھر حکومتی ارکان اور پی ٹی آئی کے رہنماؤں کے درمیان توں تکرار کی نذرہوگیا۔ پاناما کا معاملہ اسمبلی میں  چھایا رہا  ایک دوسرے کے خلاف نعرے بھی لگائے گئے ۔۔

تفصیلات کےمطابق قومی اسمبلی کا ہنگامہ خیز اجلاس  میں پھر حکومتی ارکان اور اپوزیشن ایک دوسرے کے آمنے سامنے  آگئے ۔ اجلاس کے دوران خوب ہنگامہ آرائی ہوئی حکومتی اور پی ٹی آئی اراکین کی ایک دوسرے کے خلاف خوب نعرے بازی۔

وہی اسمبلی ہال اور وہی اراکین فرق صرف اتنا تھا کہ آج خواجہ سعد رفیق کی جگہ دانیال عزیز اور خواجہ آصف نے مائیک سنبھالا ۔ شاہ محمود قریشی ایک مرتبہ پھر روایتی موڈ میں سامنے آ ئے بولے کہ ابہام کو دور کرنے کے لیے وزیراعظم کی وضاحت ضروری ہے۔ شاہ محمود قریشی قطری شہزادے کے خط کو بھی نہ بھولے اور ایوان میں ایک مرتبہ پھر خط کا ذکر بھی کر ڈالا۔ اپوزیشن رہنمائوں کی تقاریر کے بعد دانیال عزیز کو موقع دینے پر اپوزیشن ارکان نے پھر خوب ہنگامہ آرائی کی  ایوان نعروں سے گونج اُٹھا۔ دانیال عزیز نے بھی موقع ملنے پر عمران خان اور پی ٹی آئی پر تنقید کے نشتر خوب چلائے ۔

اس دوران پی ٹی آئی کی ڈاکٹر شیریں مزاری بار بار پر تولتی دکھائی دیں تو اسپیکرنے اُنہیں آڑے ہاتھوں لیا اور کہا کہ بڑی ہو گئی  ہیں ایوان کے قواعد و ضوابط پڑھ لیں۔ خواجہ آصف بھی کہاں خاموش رہنے والے تھے اپنی باری پر خوب بولے اور کہا وہ روزانہ یہاں آکر عمران خان کا انتظار کرتے ہیں ، عمران خان سے متعلق سوالات اٹھائے ہوئے ہیں، پردہ نشین کو تو پہلے ایوان میں لائیں۔ خورشید شاہ نے بھی انٹری ڈالی اور کہا کہ اپوزیشن اپنی ڈیل سے منحرف ہو رہی ہے ۔

اسمبلی کے اجلاس سے پہلے اپوزیشن رہنماؤں کے درمیان ملاقات بھی ہوئی تو  دوسری طرف اسپیکر نے بھی ملاقاتیں کیں تاکہ اسمبلی کے اجلاس کو بامقصد بنایا جا سکے لیکن ہوا وہی جس کا ڈر تھا  ہنگامہ آرائی بھی ہوئی اور نعرے بھی لگے ۔