Monday, December 6, 2021
English News آج کا اخبار براہراست نشریات(UK) براہراست ٹی وی
English News آج کا اخبار
براہراست نشریات(UK) براہراست ٹی وی

قومی اسمبلی میں ویزا پالیسی پر سابق اورموجودہ وزرائے داخلہ میں ٹھن گئی

قومی اسمبلی میں ویزا پالیسی پر سابق اورموجودہ وزرائے داخلہ میں ٹھن گئی
January 24, 2018

اسلام آباد (92 نیوز) قومی اسمبلی میں ویزا پالیسی پر سابق اور موجودہ وزرائےداخلہ میں ٹھن گئی۔ عالمی این جی او کو ویزا دینے پر دونوں کی متضاد آرا۔ چودھری نثار کہتے ہیں مشرف دور میں ایسے لوگ آئے جو ملک کیلئے زہرقاتل تھے۔ ارائیول ویزا پر پابندی لگائی۔ احسن اقبال کا کہنا تھا کہ سیاحوں کو متوجہ کرنے کیلئے دروازے کھولنا پڑیں گے۔

قومی اسمبلی کا اجلاس مرتضی جاوید عباسی کی زیر صدارت ہوا۔ ویزا پالیسی پر سابق اور موجودہ وزرا داخلہ کھل کر آمنے سامنے آگئے۔

سابق وزیرداخلہ چوہدری نثار نے ایوان کو بتایا کہ عالمی این جی او وفاقی حکومت اورمقامی این جی او صوبائی حکومت کے ماتحت ہیں۔ امریکا کی جانب سے پیپلز پارٹی دور حکومت میں جو امداد دی گئی اس کا وزارت داخلہ کے پاس کوئی ریکارڈ نہیں۔

تحقیقات کے بعد پتہ چلا کہ جس امداد کے دعوے کے گئے وہ بین الاقوامی این جی اوز کے ذریعے دیئے گئے۔ عالمی این جی اوز کو اجازت اسلام آباد کی دی گئی لیکن وہ کام بلوچستان اور گلگت بلتستان میں کرتی ہیں۔

پاکستان میں ارائیول ویزا پالیسی کا انتہائی غلط استعمال کیا گیا۔ جس کی وجہ سے انھوں نےاپنے دور میں ارائیول ویزا پر پابندی لگائی۔ چوہدری نثارعلی خان نے احسن اقبال کومخاطب کرتے ہوئے کہا کہ وہ معاملات کو دائیں بائیں نہ کریں۔

وزیرداخلہ احسن اقبال نے چوہدری نثار کو جواب دیتے ہوئے کہا کہ بین الاقوامی این جی اوز کے حوالے سے پالیسی میں کوئی تبدیلی نہیں کی گئی۔ دنیا میں سیاحت کی کامپیٹیشن ہے اس لئے سیاحوں کو متوجہ کرنے کے لئے ہمیں اپنے دروازے کھولنا پڑیں گے۔