Sunday, October 2, 2022

قصور میں 92 نیوز کی خبر پر ایکشن ، طالبہ سے زیادتی کا مرکزی ملزم جاوید گرفتار

قصور میں 92 نیوز کی خبر پر ایکشن ، طالبہ سے زیادتی کا مرکزی ملزم جاوید گرفتار
 قصور (92 نیوز) قصور میں 92 نیوز کی خبر پر ایکشن لے لیا گیا۔ طالبہ سے زیادتی کا مرکزی ملزم جاوید گرفتار کر لیا گیا۔ ایس پی انوسٹی گیشن قصور کے مطابق زیادتی کیس میں ملوث افراد اور ان کی پشت پناہی کرنے والوں کے خلاف بھی کارروائی ہو گی۔ طالبہ اور ملزم کا ڈی این اے سیمپل بھی لاہور میں لے لیا گیا۔ ورثاء کا کہنا تھا تفتیشی افسر وکیل اے ایس آئی نے ڈی این اے سیمپل کے حصول کے لئے لاہور روانگی پر ملزم اور طالبہ کو ایک ہی گاڑی میں بٹھائے رکھا ۔ پولیس کے رویہ سے انصاف کی امید نہیں۔ قبل ازیں قصور کی گلبرگ کالونی میں میٹرک کی طالبہ سے اجتماعی زیادتی کے واقعہ میں ورثا نے پولیس پر مقدمہ درج ہونے کے بعد ملزموں سے ڈیل کرنے کا الزام لگایا تھا۔ والدین کا کہنا تھا مرکزی ملزم جاوید نے اے ایس آئی غلام نبی کے گھر میں پناہ لے رکھی ہے۔ تفتیشی افسر بھی ملزموں کو گرفتار کرنے کی بجائے مدعی پارٹی کو دھمکیاں دیتا ہے کہ تم لوگ 2 نمبر ہو۔ متاثرین نے کہا ڈاکٹر بننے کی خواہشمند متاثرہ بچی آج بھی میٹرک ریاضی کا پرچہ دے رہی ہے ۔ پولیس ہماری بات نہیں سن رہی اور ملزمان کی سپورٹ کر رہی ہے ۔