Saturday, December 4, 2021
English News آج کا اخبار براہراست نشریات(UK) براہراست ٹی وی
English News آج کا اخبار
براہراست نشریات(UK) براہراست ٹی وی

قرضے رضا کارانہ واپس کر دیں، ہم یہ رقم ڈیم کیلئے استعمال کرینگے ، چیف جسٹس

قرضے رضا کارانہ واپس کر دیں، ہم یہ رقم ڈیم کیلئے استعمال کرینگے ، چیف جسٹس
August 2, 2018
اسلام آباد (92 نیوز) چیف جسٹس میاں ثاقب نثار نے ڈیمز کی تعمیر سے متعلق کیس میں ریمارکس دیئے کہ قرضے رضا کارانہ واپس کر دیں، ہم یہ رقم ڈیم کیلئے استعمال کرینگے۔ اسلام آباد میں ڈھڈوچہ ڈیم کی تعمیر ہو، بحریہ ٹائون کی جانب سے بحریہ کا نام استعمال کرنے کا معاملہ یا قرضہ معافی کیس، تینوں مقدمات میں چیف جسٹس نے ڈیمز کی تعمیر سےمتعلق اہم ریمارکس دیئے ہیں۔ ڈھڈوچہ ڈیم کی تعمیر کے کیس میں چیف جسٹس نے کہا کہ پانی کی قلت ختم کرنے کے لیے چھوٹے بڑے ڈیمز بنانا ہوں گے۔ ملک ریاض کا کہنا تھا کہ بیوروکریسی کی مرہون منت نہ کریں۔ ڈیم بنا کر دیں گے۔ چیف جسٹس نے کہا کہ بیوروکریسی کی وجہ سے آپ یہاں تک پہنچے ہیں۔ پروپوزل جمع کرائیں۔ پنجاب حکومت سے رائے لیں گے۔ عدالت نے پیپلی ڈیم سے متعلق بھی جواب مانگتے ہوئے ایڈووکیٹ جنرل پنجاب اور چیف سیکرٹری کو طلب کر لیا۔ اس کے بعد سماعت 29 اگست کو دوبارہ ہو گی۔ ادھر بحریہ ٹائون کی جانب سے بحریہ نام استعمال کرنے سے متعلق ازخود نوٹس کیس کی سماعت کے دوران چیف جسٹس نے ملک ریاض سے استفسار کیا کہ بتائیں ڈیمزکے لیے کیا کر رہے ہیں۔ ملک ریاض نے کہا کہ جو ہو سکا کریں گے۔ چیف جسٹس کا کہنا تھا کہ اربوں روپے کی رقم ڈیم فنڈ میں دے دیں۔ عدالت نے بحریہ نام استعمال کرنے کا معاملہ 15 دن میں نمٹانے کا حکم دیتے ہوئے سماعت غیرمعینہ مدت کےلیے ملتوی کر دی۔ قرضہ معافی کے مقدمے میں بینک سربراہ عدالت میں پیش ہوئے۔ چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ رقم کا 75 فیصد جمع کرایا جائے، جو اس آپشن پر عمل کرنا چاہتے ہیں بتا دیں۔ یہ رقم ڈیم کی تعمیر پر لگانی ہے۔ کمیشن بنا کر مسئلے کا حل نکالا جائے۔