Wednesday, December 7, 2022

فیصل آباد: پولیس نے طیبہ کی پھوپھی سمیت دو افراد کو حراست میں لے لیا

فیصل آباد: پولیس نے طیبہ کی پھوپھی سمیت دو افراد کو حراست میں لے لیا

فیصل آباد (92نیوز) جج کے گھر مبینہ تشدد کا نشانہ بننے والی گھریلو ملازمہ طبیہ اور اس کے والدین کا 3روز بعد بھی کچھ پتا نہ چل سکا۔ گزشتہ روز فیصل آباد میں پولیس نے طیبہ کی ماں ہونے کی دعویدار کوثر بی بی کے خلاف درج مقدمے میں نامزد 2ملزمان کو گرفتار کیا تو آج جڑانوالہ میں اسلام آباد پولیس نے طیبہ کی پھوپھی سمیت 2 افراد کو حراست میں لے لیا۔

تفصیلات کے مطابق گھریلو ملازمہ طیبہ تشدد کیس میں پولیس حرکت میں آئی اور ملزمان کی گرفتاری اور تحقیقات میں بھی پیش رفت ہو رہی ہے۔ جڑانوالہ کے نواحی گاؤں 381 گ ب سے لاپتہ ہونے والی طیبہ اور والدین کا 3روز بعد بھی کچھ پتا نہیں چل سکا۔

آج صبح اسلام آباد پولیس نے کارروائی کرتے ہوئے طیبہ کی پھوپھی کو حراست میں لے لیا۔ پولیس نے اہلِ علاقہ سے پوچھ گچھ کی اور طیبہ کو کام پر رکھوانے والی ہمسائی کے بیٹے انوار سمیت دو افراد کو اسلام آباد لے گئی۔

گزشتہ روز فیصل آباد پولیس نے کارروائی کرتے ہوئے ماں ہونے کی دعویدار خاتون کے درج کردہ مقدمے کے 2 ملزمان عبدلرشید اور اسامہ اور گرفتار اور قمر بی بی کو شاملِ تفتیش کیا۔ پولیس کی جانب سے کیس کی گھتیاں سلجھانے والے ملزمان کی گرفتاریاں اور تحقیقات تو جاری ہیں مگر طیبہ کہاں یہ سوال ابھی بھی اٹکا ہوا ہے۔