Monday, December 6, 2021
English News آج کا اخبار براہراست نشریات(UK) براہراست ٹی وی
English News آج کا اخبار
براہراست نشریات(UK) براہراست ٹی وی

غلط الزامات لگائے گئے، تحقیقات ہونی چاہیے، عابد باکسر

غلط الزامات لگائے گئے، تحقیقات ہونی چاہیے، عابد باکسر
July 21, 2018
لاہور (92 نیوز) سابق پولیس انسپکٹر عابد باکسر بھی جے آئی ٹی کا مطالبہ کرنے والوں میں شامل ہو گئے۔ انہوں نے کہا کہ ان پر غلط الزامات لگائے گئے جن کی تحقیقات ہونی چاہیے۔ پنجاب پولیس کے سابق انسپکٹر نے نائنٹی ٹو نیوز کے پروگرام نائٹ ایڈیشن میں گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ان پر لگائے گئے غلط اور جھوٹے ہیں جن کی مکمل تحقیقات ہونی چاہیے۔ مزید بولے کہ سابق وزیراعلیٰ شہبازشریف کے حکم پر جعلی پولیس مقابلوں میں مخالفین کو مروایا جاتا تھا۔ پنجاب کے حکمرانوں کا کچا چٹھا کھولتے ہوئے کہا کہ وہ شہباز شریف کی جانب سے لوگوں کو قتل کروائے جانے کے ثبوت بھی عدالت کو فراہم کرنے کا ارادہ رکھتے ہیں۔ اس سے قبل عابد باکسر نے مسلم لیگ ن کے صدر کے خلاف انکشافات پر مبنی ویڈیو بیان جاری کیا تھا جس میں  انہوں نے انکشاف کیا تھا کہ شہباز شریف لوگوں کے جعلی ریکارڈ بنوا کر ان کی  زمینوں پر قبضہ کرتے تھے۔ قبل ازیں عابد باکسر نے کہا کہ مجھے لوگ انکاؤنٹر اسپیشلسٹ کے نام سے یاد کرتے تھے ایک وقت آیا میں خود جعلی پولیس مقابلے کے خوف سے 11 سال تک جلاوطن رہا یہ مکافات عمل ہے، پولیس اہلکاروں سے کہتا ہوں اپنے ضمیر کے مطابق کام کریں۔ عابد باکسر نے کہا کہ ایک تنظیم کے  اہلکاروں کو جہاں بھی پکڑے جائیں مارنے کا حکم تھا ، گلشن راوی میں جس وقت 2 حافظ قرآن بھائی مارے گئے وہ قرآن پاک کی تلاوت کر رہے تھے ، مقتولین  کی ماں نے بددعا دی تھی کہ اللہ ایک دن شہباز شریف سے ضرور بدلہ لے گا ۔ عابد باکسر نےمزید کہا کہ باغ بچہ کا 22 سو کنال کا رقبہ  میرے ماموں کی ملکیت تھا ، میاں صاحب وہ ہتھیانا چاہتے تھے ، نہ دینے پر میرے ماموں کو قتل کر دیا گیا۔ شہبازشریف نے عمر ورک، بشیرنیازی، فیاض ٹنڈا کے ذریعے جعلی پولیس مقابلوں میں بے گناہ افراد قتل کروائے ۔ عابد باکسر نے مطالبہ کیا کہ پولیس کے جعلی مقابلوں سے متعلق جے آئی ٹی تشکیل دی جائے ، میں اپنی بے گناہی ثابت کروں گا۔