Wednesday, September 28, 2022

عمران فاروق قتل کیس : سنسنی خیز انکشافات کے بعد کراچی سے گرفتاریاں متوقع

عمران فاروق قتل کیس : سنسنی خیز انکشافات کے بعد کراچی سے گرفتاریاں متوقع
اسلام آباد (92نیوز) ڈاکٹر عمران فاروق قتل کیس میں مزید گرفتاریوں کے لئے ایف آئی اے کاو¿نٹر ٹیررازم ونگ کی خصوصی ٹیم کراچی روانہ کردی گئی ہے۔ جسمانی ریمانڈ پر موجود تین ملزموں کے سنسنی خیز انکشاف کے بعد ٹیم کو کراچی روانہ کیا گیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق ایف آئی اے کاو¿نٹر ٹیررازم ونگ نے تینوں ملزموں کا جسمانی ریمانڈ ملنے کے بعد تفتیش کا نئے سرے سے آغاز کردیا ہے۔ ذرائع کے مطابق دوران تفتیش ملزموں نے کئی اہم انکشاف کئے ہیں۔ ملزم معظم‘ خالد شمیم اور محسن نے تفتیشی ٹیم کو بتایا کہ قتل کی اس سازش میں الطاف حسین‘ محمد انور‘ افتخار حسین کے علاوہ کراچی سے ایم کیو ایم سے تعلق رکھنے والی کچھ اہم شخصیات بھی شامل ہیں جنہوں نے بطور سہولت کار کردار ادا کیا۔ تفتیشی ٹیم نے ان شخصیات کے نام تو ابھی ظاہر نہیں کئے تاہم گرفتاری کے لئے کاو¿نٹر ٹیررازم ونگ کی ایک خصوصی ٹیم کراچی کے لئے روانہ کردی ہے۔ چھاپہ مار ٹیم کو رینجرز اور ایف آئی اے کراچی کی معاونت بھی حاصل ہوگی۔ ٹیم ایک ہفتے تک کراچی میں موجود رہے گی۔ خصوصی ٹیم گرفتاریوں کے علاوہ مختلف گواہوں کے بیانات بھی قلمبند کرے گی۔ دوسری جانب کیس کی تحقیقات کے لئے مشترکہ تحقیقاتی ٹیم کا آج نوٹیفکیشن جاری ہونے کا امکان ہے۔ جے آئی ٹی میں ایف آئی اے کے علاوہ پولیس‘ رینجرز، آئی ایس آئی اور آئی بی کا ایک ایک نمائندہ شامل ہوگا۔ جے آئی ٹی ملزموں کے ریمانڈ کے اختتام پر اپنی ابتدائی انٹیروگیشن رپورٹ انسداد دہشت گردی کی خصوصی عدالت میں پیش کرے گی۔