Wednesday, December 7, 2022

عمران خان کی امریکی تاجروں کو سرمایہ کاری کی پیشکش

عمران خان کی امریکی تاجروں کو سرمایہ کاری کی پیشکش
واشنگٹن(ویب ڈیسک ) وزیراعظم عمران خان نے امریکی تاجروں کو سرمایہ کاری کی پیشکش کی ، انہوں نے کہا کہ   پاکستان جلد ہی مسائل پر قابو پا لے گا ، ہم ملک میں کسی کو اس بات کی اجازت نہیں دیں گے کہ وہ امن و امان میں خلل پیدا کرے ۔اپوزیشن جماعتیں ملک میں انتشار پیدا کر کے غیر ملکی سرمایہ کاروں کو روکنے کی سازش کر رہی ہیں ۔ ا ن کی یہ سازش کامیاب نہیں ہو گی۔ واشنگٹن میں وفاقی وزراکے اجلاس سے خطاب اور مختلف وفود سے ملاقاتوں سے گفتگو کرتے ہوئے  وزیر اعظم کا کہنا تھا کہ  پاکستان مشکل دور سے گزر رہا ہے  ،  ماضی کی دو کرپٹ حکومتوں نے ملک کا دیوالیہ نکال دیا۔ ہم ملک کو صحیح سمت کی جانب گامزن کرنے کیلئے جدوجہد کر رہے ہیں۔

اللہ میرے ساتھ ہے

وزیر اعطم نے کہا کہ  ہمیں اس بات کا احساس ہے کہ منزل پانے کیلئے کئی بڑے چیلنجز کا سامنا کرنا پڑے گا ،میں نے کبھی ہمت ہاری ہے اور نہ ہاروں گا ، اﷲ میرے ساتھ ہے ، یہ مشکل وقت بھی گزر جائیگا۔ اپوزیشن جماعتیں جتنا مرضی شورمچائیں ہمارا قافلہ آگے بڑھتا رہے گا ۔

سرمایہ کاری کیلئے پاکستان محفوظ ملک ہے

عمران خان سے امریکی تاجروں اور سرمایہ کاروں کے وفود نے بھی ملاقاتیں کیں  ، وزیراعظم نے امریکی تاجروں اور سرمایہ کاروں کو پاکستان میں اقتصادی اور کاروباری مواقع سے فائدہ اٹھانے کی پیشکش کی۔امریکہ کے ممتاز بزنس مین جاوید انور کی قیادت میں ملنے والے وفد سے وزیر اعظم کا کہنا تھا غیر ملکی سرمایہ کاروں کیلئے اس وقت پاکستان محفوظ ملک ہے ۔ حکومت انہیں ہرممکن سہولیات فراہم کریگی۔ وفد نے توانائی اور سیاحت کے شعبوں میں دلچسپی کا اظہار کیا ۔وفد نے پاکستان میں سکیورٹی کے حالات پر اطمینان کا اظہار کیا۔ وزیراعظم سے ڈیموکریٹک پارٹی کے رہنما اور نامور سرمایہ کار طاہر جاوید ، سابق پاکستانی سفیر منیر اکرم ، معروف کاروباری شخصیات سہیل خان، اسلم خان، مبشر چو دھری، ڈاکٹر باسط جاوید ، عابد شیخ نے بھی ملاقاتیں کی اور سماجی و معاشی ترقی کیلئے وزیراعظم عمران خان کے وژن کی تعریف کی گئی۔ اس موقع پر وزیرخارجہ شاہ محمودقریشی، وزیربحری امور علی حیدرزیدی،مشیرتجارت عبدالرزاق دائود،مشیرخزانہ عبدالحفیظ شیخ بھی موجودتھے ۔اعلامیہ کے مطابق ملاقات میں تجارت اورسرمایہ کاری کے امورپر گفتگوکی گئی۔

امریکہ کے بڑے کاروباری گروپس کی وزیراعظم سے ملاقاتیں

امریکہ کے بڑے کاروباری گروپوں کے سربراہان حسنین اسلم،ضیا چشتی اور محمد خائیشگی نے بھی اپنے وفود کے ساتھ وزیراعظم سے خصوصی ملاقاتیں کیں۔ان بڑے کاروباری گروپوں کے سربراہان نے سائنس اینڈ ٹیکنالوجی کے شعبوں میں سرمایہ کاری کی خواہش کا اظہار کیا،امریکہ کے ملٹی نیشنل کاروباری شخصیات ناصر جاوید ، اشرف قاضی اور شوکت دانانی نے وزیراعظم سے ملاقات کی ان سرمایہ کاروں نے پاکستان کے سٹیل سیکٹر میں سرمایہ کاری میں دلچسپی کا اظہار کیا ۔
اوور سیز پاکستانی معیشت کی ریڑھ کی ہڈی
وزیراعظم کا کہنا تھا اوورسیز پاکستانی ہماری معیشت میں ریڑھ کی ہڈی کی حیثیت رکھتے ہیں ،  یہ وقت ہے پاکستان میں بہتر سرمایہ کاری کا  ،حکومت غیر ملکی سرمایہ کاروں کو ہر ممکن تحفظ اور انہیں مراعات فراہم کرے گی۔آئی ایم ایف کے ایکٹنگ مینجنگ ڈائریکٹر ڈیوڈ لپٹن نے بھی وزیراعظم سے ملاقات کی ہے ۔

ورلڈ بینک کے صدر کی ملاقات

ورلڈ بنک کے صدر ڈیوڈ مالپاس کی قیادت میں ایک وفد نے وزیراعظم سے ملاقات کی اس موقع پر وزیراعظم نے انہیں پاکستان کی اقتصادی اور معاشی پالیسیوں کے بارے آگاہ کیا وفد نے حکومتی پالیسیوں پر اطمینان کا اظہار کیا ،امریکی اقتصادی ادارے ایلکلیڈ اینڈ فے گروپ کے وائس چیرمین کیون فے نے بھی اپنے وفد کے ہمراہ وزیراعظم سے ملاقات کی۔ قبل ازیں وزیر اعظم عمران خان کا واشنگٹن ڈی سی پہنچنے پر پاکستانی کمیونٹی کی جانب سے شاندار استقبال کیا گیا۔استقبال کیلئے آنے والوں نے پاکستان اورپی ٹی آئی کے پرچم اٹھا رکھے تھے ۔ انہوں نے پاکستان زندہ باد کے نعرے لگائے اور روایتی رقص کیا۔ ڈیلاس ائیر پورٹ سے واشنگٹن ڈی سی تک سو کاروں کی ریلی وزیراعظم کے ساتھ تھی ۔