Friday, September 30, 2022

عمران خان پہلے سلیکٹڈ تھا، اب ریجیکٹڈ ہو گیا، مولانا فضل الرحمن

عمران خان پہلے سلیکٹڈ تھا، اب ریجیکٹڈ ہو گیا، مولانا فضل الرحمن
اسلام آباد (92 نیوز) عمران خان پہلے سلیکٹڈ تھا، اب ریجیکٹڈ ہوگیا، مقصد کے حصول کے قریب پہنچ گئے ہیں، مولانا فضل الرحمن نے کہا اپوزیشن کی تمام جماعتوں نے مارچ کو پذیرائی بخشی، تمام سیاسی قائدین نے ساتھ چلنے کا یقین دلایا، سیاسی جماعتوں کے حوالے سے افواہیں دم توڑگئیں۔ جے یوآئی سربراہ نے دھرنے سے خطاب میں کہا تحریک انصاف کل بھی تنہا تھی آج بھی تنہا ہے، کمزور پالیسیوں کے باعث پاکستان تنہا ہوگیا، ہم ملک کو طاقتور دیکھنا چاہتے ہیں۔ انہوں نے اے پی سی کے حوالے سے بتایا کہ آزادی مارچ سے متعلق اہداف کے قریب پہنچ چکے ہیں۔ تمام جماعتوں نے پہلے بھی ساتھ چلنے کی یقین دہانی کروائی اور آج بھی یہی کہا ہے۔ مولانا فضل الرحمن کا کہنا تھا کہ حکومت کی ناقص پالیسیوں نے ملک کو بحران کا شکار بنا دیا، عوام کے حقوق کی خاطر ہم اکٹھے ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ ہم کسی بھی قسم کا تصادم نہیں چاہتے، ہم قوم کو ایک منظم نظام کے لیے متحد کرنا چاہتے ہیں، ہم ملک میں قانون پر عمل ردآمد کو یقینی بنانے کے خواہاں ہیں۔ جے یوآئی چاہتی ہے کہ قوم فرقوں میں نہ بٹے،ملک میں موجود اقلیتوں کوتحفظ ملے۔