Saturday, January 22, 2022
براہراست ٹی وی براہراست نشریات(UK) آج کا اخبار English News
English News آج کا اخبار
براہراست ٹی وی براہراست نشریات(UK)

خیبرپختونخوا میں ڈاکٹرز اور طبی عملہ بھی ہڑتال پر‘ لازمی سروسز ایکٹ مسترد

خیبرپختونخوا میں ڈاکٹرز اور طبی عملہ بھی ہڑتال پر‘ لازمی سروسز ایکٹ مسترد
February 9, 2016
پشاور (92نیوز) پشاورکے تین بڑے تدریسی اسپتالوں کو خودمختاری دینے اور لازمی سروسز ایکٹ کرنے کے خلاف مسیحا بپھر گئے۔ او پی ڈی بند اور وارڈ چھوڑ کر صوبائی حکومت کے خلاف نعرے بازی کرتے رہے۔ ڈاکٹروں اور طبی عملے کی ہڑتال پرمریضوں کے لواحقین کا بھی پارہ چڑھ گیا۔ ٹائر جلائے اور ڈاکٹروں کو کوستے رہے۔ تفصیلات کے مطابق خیبرپختونخوا حکومت نے پشاور کے تین بڑے تدریسی اسپتالوں لیڈی ریڈنگ، خیبرٹیچنگ اور حیات آباد میڈیکل کمپلیکس میں ایم ٹی آئی ایکٹ نافذ کرکے خودمختاری دی تو ڈاکٹر اور طبی عملہ اپنی سرکاری ملازمت ختم ہونے اور اضافی ڈیوٹی کے خلاف ہڑتال کردی۔ ڈاکٹروں کی ہڑتال روکنے کےلئے لازمی سروسز ایکٹ کے نفاذ پر بھی مسیحا بپھر گئے۔ لیڈی ریڈنگ اسپتال میں ڈاکٹروں نے او پی ڈی بند اور وارڈز سے ہڑتال کرکے احتجاج کیا۔ ڈاکٹروں کی ہڑتال کے باعث علاج سے محروم مریضوں کے لواحقین بھی مشتعل ہوگئے اور مسیحاﺅن کےخلاف سڑک پر نکل آئے ٹائرجلائے اور ڈاکٹروں کے خلاف احتجاج کیا۔ لیڈی ریڈنگ اسپتال انتظامیہ نے پولیس کے ذریعے او پی ڈی کھلوا کر ہڑتال نہ کرنے والے ڈاکٹروں کو بٹھادیا۔ ڈاکٹروں اور طبی عملے کی ہڑتال حیات آباد میڈیکل کمپلیکس اور خیبرٹیچنگ اسپتال میں بھی جاری ہے۔