Wednesday, October 5, 2022

طالبان امیر ملا اختر منصور جھڑپ میں شدید زخمی ہو گئے : افغان حکام کا دعویٰ

طالبان امیر ملا اختر منصور جھڑپ میں شدید زخمی ہو گئے : افغان حکام کا دعویٰ
کابل (ویب ڈیسک) افغان حکام نے دعویٰ کیاہے کہ طالبان کے دوگروپوں میں لڑائی کے نتیجے میں افغان طالبان کا سربراہ ملا اختر منصور شدید زخمی ہو گیا جبکہ پانچ کمانڈر ہلاک ہو گئے۔ ایک ماہ سے جاری طالبان گروپوں کی لڑائی میں ملا منصور داداللہ پہلے ہی مارا جاچکا ہے۔ تفصیلات کے مطابق طالبان میں اختلافات ایک بارپھرخونی تصادم میں تبدیل ہو گئے۔ افغان وزارت داخلہ نے بدھ کے روزدعویٰ کیاہے کہ طالبان کے موجودہ سربراہ ملا اختر منصور دو گروپوں کی لڑائی میں شدیدزخمی ہوا ہے۔ افغان حکام کاکہناہے کہ طالبان گروپوں میں لڑائی مجلس شوریٰ کے چارارکان کی بنیادی رکنیت معطل کرنے کے معاملے پر ہوئی تاہم افغان حکام نے کسی طالبان رہنما کے مارے جانے کی تصدیق نہیں کی۔ لڑائی میں ملاعبداللہ سرحدی بھی ماراگیاہے۔ طالبان گروپوں میں لڑائی کی خبرکے بعدایک بارپھرپرامن افغانستان کے حوالے سے مذاکرات کامعاملہ کھٹائی میں پڑتا نظر آرہا ہے۔ گزشتہ ماہ افغانستان کے علاقے زابل میں دوطالبان گروپوں میں لڑائی کے نتیجے میں طالبان باغی رہنماملامنصورداداللہ مارا گیا تھا جبکہ کچھ عرصہ قبل ملاعمرکی موت کی خبرکے بعدسے افغان حکومت اورطالبان میں مذاکرات تعطل کاشکار ہیں۔