Wednesday, January 19, 2022
براہراست ٹی وی براہراست نشریات(UK) آج کا اخبار English News
English News آج کا اخبار
براہراست ٹی وی براہراست نشریات(UK)

سپریم کورٹ نے دوہری شہریت والے 4 نومنتخب سینیٹرز کا نوٹیفکیشن جاری کرنے سے روکدیا

سپریم کورٹ نے  دوہری شہریت والے 4 نومنتخب سینیٹرز کا نوٹیفکیشن جاری کرنے سے روکدیا
March 5, 2018

اسلام آباد ( 92 نیوز ) سپریم کورٹ نےدوہری شہریت رکھنے والے 4 نومنتخب سینیٹرز کا نوٹی فکیشن جاری کرنے سے روک دیا۔ عدالت نے الیکشن کمیشن کو حکم جاری کیا ہے کہ چاروں سینیٹرز کا نوٹی فکیشن جاری  نہ کیا جائے۔

دوہری شہریت سے متعلق کیس کی سماعت ہوئی تو 43 ڈویژنوں کے سیکریٹریز اور حکام سیکریٹری الیکشن کمیشن ،اٹارنی جنرل اور وزیراعظم کے پرنسپل سیکریٹری فواد حسن فواد عدالت میں پیش ہوئے ۔

اٹارنی جنرل نے انکشاف کیا کہ نو منتخب ہونے والے 4 سینیٹرز ایسے ہیں جو دوہری شہریت رکھتے ہیں جن میں وزیراعظم کی ہمشیرہ سعدیہ عباسی ،نزہت صادق ،سرور چوہدری اور ہارون اختر شامل ہیں ۔

چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس ثاقب نثار نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ جو شخص دوہری شہریت رکھتا ہے وہ سینیٹرز نہیں بن سکتا ۔

سیکریٹری الیکشن کمیشن نے کہا کہ سعدیہ عباسی نے 7 فروری کو دوہری شہریت چھوڑنے کا کہا تھا جس پر چیف جسٹس نے کہا کہ صرف کہا تھا یا انہوں نے دوہری شہریت چھوڑ دی ۔

سپریم کورٹ نے دوہری شہریت رکھنے والے سینیٹرز کو ذاتی حیثیت میں طلب کرلیا،8 مارچ کو سپریم کورٹ میں حاضر ہوکر اپنی پوزیشن واضح کریں۔