Sunday, November 27, 2022

سواری نہ ہونے پر رکشہ چلانیوالوں کو روٹی کے لالے پڑ گئے

سواری نہ ہونے پر رکشہ چلانیوالوں کو روٹی کے لالے پڑ گئے

کراچی ( 92 نیوز) کراچی میں لاک ڈاون کا آج دسواں دن ہے،روزکمانےاور روز کھانے والےصورتحال سے پریشان ہیں،رکشہ چلانے والے رکشہ لیکر سڑکوں پر گھوم رہے ہیں ،لیکن نہ سواری مل رہی ہے اور نہ ہی  کوئی مدد۔

آنکھوں میں اداسی ، چہرے پرفکریں لئے کراچی کے رکشہ ڈرائیور  جو کبھی رکشے چلا کر  گھروں کا چولہا جلاتے تھے ، آج سواری نہ ہونے کے باعث  پریشان ہیں ، لیکن لاک ڈاؤن کی وجہ سےآمدنی کا سلسلہ رک گیاہے ، یہ رکشہ لیکر نکلتے ہیں مگر سواری نہیں ملتی ۔

رکشہ ڈرائیور زکا کہنا تھا کہ حکومت سےکوئی امداد نہیں ملی ، مجبورا ًکسی پرانےجاننےوالےسےراشن لینا پڑتا ہے ،سب کی دعاہےکہ کوروناوائرس کا خاتمہ ہو اور زندگی معمول پرآئے۔

کورونا وائرس کی وجہ سے لاک ڈاؤن کے باعث غریب مزدور دیہاڑی دار طبقے  کو شدید پریشانی کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے،کام نہ ہونے کے باعث نوبت فاقوں تک پہنچ گئی ہے  ۔

چہرے پر مایوسی ، آنکھوں میں بے چینی لئے کسی مسیحا  کے منتظر لاہور کے  مزدور دیہاڑی دار طبقے  کو کورونا وائرس  اور لاک ڈاؤن نے بری طرح متاثر کیا ہے ،  جن کے گھروں میں  کام بند ہونے سے  فاقے پڑ گئے ہیں۔

ان مزدوروں کا کہنا ہے کہ 9 روز سے کام بند ہونے کے باعث دو وقت کی روٹی کھانا بھی محال ہوگیا ہے، بچوں کی بھوک  نے  بھیک مانگنے پر بھی مجبور کر دیا ہے ۔

ان  کا کہنا ہے کہ حکومت کو غریب مزدور دیہاڑی دار طبقے کے لئے فوری حکومتی امداد اور روز گار کے حوالے سے محفوظ اقدامات کرنے کی ضرورت ہے۔