Wednesday, January 19, 2022
براہراست ٹی وی براہراست نشریات(UK) آج کا اخبار English News
English News آج کا اخبار
براہراست ٹی وی براہراست نشریات(UK)

سندھ ہائیکورٹ نے نمرتا کیس کی جوڈیشل انکوائری کی اجازت دے دی

سندھ ہائیکورٹ نے نمرتا کیس کی جوڈیشل انکوائری کی اجازت دے دی
September 26, 2019
 کراچی (92 نیوز) سندھ ہائیکورٹ نے نمرتا کیس کی جوڈیشل انکوائری کی اجازت دے دی۔ سیشن جج لاڑکانہ نے صوبائی حکومت کی درخواست پر ہائیکورٹ سے اجازت مانگی تھی۔ نمرتا ہلاکت کیس میں ایف آئی اے کی رپورٹ پولیس کو موصول ہو گئی ۔ ذرائع کے مطابق نمرتا آخری وقت تک مہران ابڑو سے رابطے میں تھی جبکہ دونوں کے درمیان چپقلش کا ریکارڈ بھی مل گیا ہے ۔ نمرتا اور مہران ابڑو کے درمیان شادی کے معاملے پر تلخ کلامی بھی ہوئی تھی ۔ گرفتار طالبعلم مہران ابڑو کی جانب سے مٹائے گئے پیغامات کا ریکارڈ بھی مل گیا ہے ۔ پولیس ذرائع کے مطابق مہران ابڑو نے آخری وقت نمرتا کو جواب دینا بند کر دیا تھا ۔ پولیس نے ریکارڈ کی روشنی میں طالبعلم کا بیان دوبارہ ریکارڈ کا فیصلہ کیا ہے ۔ نمرتا ہلاکت کیس میں نمرتا کے اے ٹی ایم  کارڈ سے مہران کی  بہنوں کے بھی شاپنگ کرنے کا انکشاف ہوا تھا ۔ منظر عام پر آنے والی ایک ویڈیو میں  نمرتا مہران کی بہنوں  باکھ اور کومل کو شاپنگ کرواتی بھی نظر آئی ۔ مہران ابڑو بھی پولیس  کو دیے بیان میں نمرتا سے جذباتی لگاؤ کا اظہار کر چکاہے ۔  بیان میں اس کا کہنا تھا کہ نمرتا کے ساتھ  چار سال قبل دوستی ہوئی ،  نمرتا شادی کرنا چاہتی تھی،اس نے منع کردیا ۔ نمرتا  نے ایک پروفیسر سے بھی مشورہ کیا تھا ،موت  کی اطلاع دوستوں سے ملی ،ادھر کراچی سمیت سندھ کے مختلف شہروں میں احتجاجی مظاہرے کیے گئے۔