Friday, January 28, 2022
براہراست ٹی وی براہراست نشریات(UK) آج کا اخبار English News
English News آج کا اخبار
براہراست ٹی وی براہراست نشریات(UK)

سندھ حکومت نے آئی جی کے اختیارات پر ایک بارپھر ٹوکا چلادیا

سندھ حکومت نے آئی جی کے اختیارات پر ایک بارپھر ٹوکا چلادیا
June 30, 2017

 

کراچی (92نیوز)آئی جی سندھ اے ڈی خواجہ پر حکومت سندھ کا ایک اور وار آئی جی سندھ سے پولیس محکمے کے گریڈ اٹھارہ اور گریڈ انیس کے افسران کے تبادلے اور تقرری کے اختیارات واپس لےلئے گئے۔

تفصیلات کےمطابق سندھ حکومت آئی جی پولیس اے ڈی خواجہ کے خلاف گھیرا مزید تنگ کرنے لگی۔ سائیں کی سرکار اور پولیس سربراہ میں جاری سرد جنگ اس وقت مزید تیز ہوگئی جب  چیف سیکریٹری نے اختیارات محدود کرنے کیلئے ایک اور پروانہ جاری کر دیا ۔ نوٹی فیکشن کے مطابق اب پولیس میں گریڈ انیس کے  ایس ایس پی اور گریڈ اٹھارہ کے ایس پی کا تقرر آئی جی سندھ کے بجائے  سروس جنرل ایڈمنسٹریشن کرے گی  ۔ جاری نوٹی فیکشن میں سندھ سول سرونٹ کے رول 1974 کی شق نو کی سب رول دو کا حوالہ دیا گیا۔

سروسز اینڈ جنرل ایڈمنسٹریشن وزیر اعلی سندھ مراد علی شاہ کی  منظوری کے بعد ایس ایس پی اور ایس پیز کے تقرر اور تبادلے کرے گی۔ اس سے قبل  آئی جی سندھ کو انیس جون کو  سیکرٹری داخلہ کے لیگل کیمٹی کے اجلاس میں بھی نہیں بلایا گیا جبکہ وزیرداخلہ سندھ کی طرف سے بھی آئی جی سندھ کو نظرانداز کیا جارہا ہے ۔ آئی جی سندھ کو پولیس سینٹرل ہیڈ آفس تک محدود کرنے کیلئے ،انہیں ہیڈ آفس چھوڑنے سے قبل صوبائی حکومت کو آگاہ کرنے کی بھی ہدایات دے چکی ہے  ۔ دوسری طرف اے ڈی خواجہ کو آئی جی سندھ کے عہدے سے ہٹانے کیخلاف دائر درخواست پر فیصلہ ہائی کورٹ محفوظ کر چکی ہے ۔