Wednesday, January 26, 2022
براہراست ٹی وی براہراست نشریات(UK) آج کا اخبار English News
English News آج کا اخبار
براہراست ٹی وی براہراست نشریات(UK)

سعودی عرب ، مسلح فوج اور فضائیہ کے سربراہوں کو عہدوں سے ہٹا دیا گیا

سعودی عرب ، مسلح فوج اور فضائیہ کے سربراہوں کو عہدوں سے ہٹا دیا گیا
February 27, 2018

ریاض (92 نیوز) سعودی عرب کی سول اور فوجی انتظامیہ میں بڑے پیمانے پر اکھاڑ پچھاڑ کی گئی ۔ مسلح فوج اور فضائیہ کے سربراہوں کو عہدوں سے ہٹا دیا گیا جبکہ اہم صوبے الجوف اور عسیر کے گورنرز کو بھی تبدیل کر دیا گیا ۔
سعودی عرب میں سول اور فوجی عہدوں پر بڑی تبدیلیاں شاہی فرمان کے تحت کی گئی ۔
شاہ سلمان کے حکمنامے کے مطابق سعودی مسلح فوج کے سربراہ لیفٹیننٹ جنرل عبدالرحمان بن صالح اور فضائیہ کے سربراہ لیفٹیننٹ جنرل محمد بن عوض سحیم کو عہدوں سے ہٹا دیا گیا ۔ دونوں عہدیداروں کو جبری طور پر ریٹائر کیا گیا ۔
شاہی فرمان کے تحت میجر جنرل فیاض بن حامد الرویلی کو لیفٹیننٹ جنرل کے رینک پر ترقی دیتے ہوئے فوج کا نیا سربراہ مقرر کر دیا گیا ۔
،شاہی فرمان کے ذریعے الجوف صوبے کے گورنر شہزادہ فھد بن بندر بن عبدالعزیز کو ان کے عہدے سے ہٹا کر شہزادہ بندر بن سلطان بن عبدالعزیز کو انکی جگہ گورنر مقرر کیا گیا ۔
احکامات کے مطابق شہزادہ ترکی بن طلال بن عبدالعزیز کو عسیر صوبے کا گورنر مقرر کیا گیا جبکہ سعودی تاریخ میں پہلی بار کسی خاتون ڈاکٹر تماضر الرماح کو نائب وزیر محنت مقرر کیا گیا ۔
دیگر تبدیلیوں میں فیصل بن فاضل الابراہیم نائب وزیر اقتصادی منصوبہ بندی خالد بن سعود الشنیفی کو معاون وزیر و اقتصادی و منصوبہ بندی، محمد بن داخل المطیری کو سیکریٹری جنرل مجلس شوریٰ، ڈاکٹر عدنان آل حمیدان کو وائس چانسلر جدہ یونیورسٹی، شلعان بن راجح بن شلعان کو سیکریٹری پبلک پراسیکیوشن، ڈاکٹر عبدالعزیز بن عبداللہ الزوم کو گورنر مسابقت اتھارٹی، صالح بن محمد الشارخ کو مشیر ادارہ ریاستی سلامتی، ڈاکٹر یوسف بن طراد السعدون ، نبیہ بن عبدالمحسن البراہیم کو ارکان شوریٰ، انجنیئر ابراہیم السلطان کو رکن ریاض ڈیولپمنٹ اتھارٹی۔ شاہ سلمان نے عسیر ڈیولپمنٹ اتھارٹی کے قیام کی منظوری دیدی ۔ انہوں نے شاہ عبدالعزیز برائے قومی مکالمہ کی سیکریٹریز کونسل کی تشکیل نو کر دی جبکہ شہزادہ بندربن خالد بن فیصل کو گھڑدوڑ کلب کا چیئرمین متعین کر دیا ۔