Thursday, October 6, 2022

سُر اور سنگیت کے بےتاج بادشاہ نصرت فتح علی خاں کا آج 72 واں یومِ پیدائش

سُر اور سنگیت کے بےتاج بادشاہ نصرت فتح علی خاں کا آج 72 واں یومِ پیدائش
لاہور (92 نیوز) سُر اور سنگیت کے بےتاج بادشاہ نصرت فتح علی خاں کا بہترواں یومِ پیدائش آج منایا جا رہا ہے۔ پاکستان کے مایہ ناز شہنشاہ قوال استاد نصرت فتح علی خان کا آج بہترواں یوم پیدائش منایا جا رہا ہے، موسیقی کے افق پر کئی سالوں تک جگمگانے والے ستارے نے 13 اکتوبر 1948ء کو جھنگ بازار سے متصل علاقے نشتر آباد میں موسیقی سے جڑے چھوٹے سے گھرانے میں آنکھ کھولی۔ استاد نصرت کے والد فتح علی خاں اور تایا مبارک علی خاں اپنے دور کے بڑے قوال تھے، نصرت فتح علی خان بھائیوں میں سب سے بڑے تھے۔ اِنہیں بچپن سے ہی موسیقی کا شوق تھا لیکن آواز سریلی نہ ہونے پر والد انہیں گائیگی سے دور رکھتے، تاہم اس دوران انہوں نے طبلہ اور ہارمونیم میں کمال مہارت حاصل کرلی۔ کچھ عرصے بعد نصرت فتح علی خان کے والد نے پوشیدہ صلاحیتیں پرکھتے ہوئے انہیں موسیقی کی تربیت دینا شروع کردی، شہنشاہ قوال نے اپنے والد کی رسم چہلم پر پہلی یادگار پرفارمنس دی، نصرت کی پہلی عوامی پرفارمنس ریڈیو پاکستان فیصل آباد کے پروگرام "جشن فیصل آباد" میں نشر کی گئی۔ نصرت فتح علی خاں جب تک زندہ رہے ہر سال جھنگ بازار میں بابا لسوڑی شاہ دربار پر قوالی گاتے، استاد نصرت فتح علی خاں نے 125 البم تیار کیے جس پر ان کا نام گینیز بک آف ورلڈ ریکارڈ میں درج ہے۔ شہنشاہ قوالی کو جگر اور گردوں کی بیماری نے ایسا گھیرا کہ 6 دن زندگی و موت کی کشمکش میں رہنے کے بعد بلآخر 16 اگست 1997 کو اس جہاں فانی سے کوچ کر گئے۔ انھیں 17 اگست کو جھنگ روڈ فیصل آباد کے قبرستان میں سپردخاک کر دیا گیا۔