Thursday, January 20, 2022
براہراست ٹی وی براہراست نشریات(UK) آج کا اخبار English News
English News آج کا اخبار
براہراست ٹی وی براہراست نشریات(UK)

سادہ لوح دیہاتی مجھے سینیٹر کی بجائے جنریٹر کہتے ہیں،کرشنا کوہلی

سادہ لوح دیہاتی مجھے سینیٹر کی بجائے جنریٹر کہتے ہیں،کرشنا کوہلی
March 6, 2018

تھر ( 92 نیوز ) تھر کے ہاری اور نجی جیل کے قیدی کی بیٹی کرشنا کولہی ملک کے سب سے بڑے ایوان میں پہنچ گئیں ۔ کرشنا کولہی  کے سینیٹر بننے پر والدین خوشی سے نہال ہیں تو گاوں کی خواتین سمجھتی ہیں کہ ان کی ہم جولی جنریٹر بن گئی ہیں ۔ کسی کا خیال ہے کہ کرشنا کو اسلام آباد میں بہت بڑی نوکری مل گئی ہے ۔

جیالوں کے ٹکٹ پر سینیٹ کی رکن بننے والی کرشنا کماری کیشو بائی

تھر کے تپتے صحرا سے شہر اقتدار اسلام آباد کی پرفضا وادیوں میں پہنچنے کو ہیں۔بھوک،قید اور حالات کے جبر کا مقابلہ کرتے کرتے کرشنا کماری نے پہلے ہی پارلیمانی انتخاب میں کامیابی سمیٹی ۔

ملک کے سب سے بڑے ایوان کی رکن بننے پر کرشنا کولہی کے والدین خوشی سے نہال ہیں اور سادہ لوح تھر واسی سمجھتے ہیں کرشنا کولہی کو اسلام آباد میں بڑی نوکری مل گئی ہے۔

گاؤں کی خواتین اور دوستوں کا دلچسپ واقعہ بتاتے ہوئے ایوان بالا کی نومنتخب رکن کرشنا نے ہنستے ہوئے بتایا کہ گاؤں والوں کے مطابق وہ سینیٹر نہیں بلکہ جنریٹر بن گئی ہیں ۔

سینیٹ کے لیے ٹکٹ سے لیکر ووٹ تک کروڑوں روپے خرچ کیے گئے مگر پیپلزپارٹی نے ہاری کی بیٹی  کرشنا کماری کیشو بائی کو ملک کے سب سے بڑے ایوان میں بھیج کر بے نظیر بھٹو کے خوابوں کو حقیقت کا روپ دے دیا۔