Saturday, November 26, 2022

زلزلہ متاثرین کی مدد میں پاک فوج پیش پیش‘ چترال‘ مالاکنڈ اور دیر میں ریلیف آپریشن جاری

زلزلہ متاثرین کی مدد میں پاک فوج پیش پیش‘ چترال‘ مالاکنڈ اور دیر میں ریلیف آپریشن جاری
اسلام آباد (92نیوز) پاک فوج نے زلزلہ کے شدید زخمیوں کو ہسپتال منتقل کرنے کے لئے ہیلی کاپٹرز کے زریعے ریسکیو آپریشن شروع کر دیا ہے۔ ڈورن طیارے، ہیلی کاپٹرز اور سیٹلائٹ کے ذریعے نقصانات کا اندازہ لگایا جا رہا ہے جبکہ شاہراہ قراقرم پر رکاوٹیں ہٹانے کا کام تیز کردیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق آئی ایس پی آر کا کہنا ہے کہ زلزلے کے بعد پاک فوج کی امدادی کارروائیاں جاری ہیں۔ زلزلے کے زخمیوں کو ریسکیو کرنے کے لیے ہیلی کاپٹر آپریشن شروع کردیا گیا ہے۔ ریسکیو آپریشن کے لیے امدادی ٹیموں کی تعداد بڑھا دی گئی ہے۔ آئی ایس پی آر کا کہنا ہے کہ ڈی جی ایف ڈبلیو او جوانوں کے ساتھ قراقرم ہائی وے پر موجود ہیں۔ قراقرم ہائی وے پر 45 لینڈ سلائیڈنگ کو کلیئر کیا گیا ہے جبکہ ملک بھر میں سی ایم ایچ اسپتالوں کی گنجائش میں 30 فیصد اضافہ کردیا گیا ہے۔ آئی ایس پی آر کے مطابق سی 130 طیارہ 7 ٹن راشن لیکر چترال کے لیے روانہ ہوگیا ہے۔ امدادی سامان میں 2500 پکے پکائے کھانے کے پیکٹ‘ ایک ہزار ٹینٹ شامل ہیں۔ نقصانات کا تخمینہ لگانے کے لیے ڈرون‘ ہیلی کاپٹرز اور سٹیلائیٹ سے مدد لی جا رہی ہے۔ پاک فوج نے چترال، دیر، باجوڑ میں زلزلہ متاثرین کے لئے راشن تقسیم کے 26 پوائنٹ قائم کر دیئے گئے ہیں جہاں پر متاثرین کو تیار کھانے، کمبل اور ضروریات کی دیگر اشیاءفراہم کی جا رہی ہیں۔