Monday, November 29, 2021
English News آج کا اخبار براہراست نشریات(UK) براہراست ٹی وی
English News آج کا اخبار
براہراست نشریات(UK) براہراست ٹی وی

زرعی ماہرین نے کاشتکاروں سے تیل دار فصلوں کی کاشت کی اپیل کر دی

زرعی ماہرین نے کاشتکاروں سے تیل دار فصلوں کی کاشت کی اپیل کر دی
August 17, 2016
لاہور (ویب ڈیسک) زرعی ماہرین نے کاشتکاروں سے اپیل کی ہے کہ ملک کی تیزی سے بڑھتی ہوئی آبادی کی خوردنی تیل کی ضروریات کوپورا کرنا ایک چیلنج بنتا جا رہاہے اس لیے مقامی سطح پر تیل دار فصلوں مثلاً توریا‘ سورج مکھی کی کاشت بڑھانے کی ضرورت ہے۔ زرعی ماہرین کے مطابق پاکستان خوردنی تیل کی کل ضروریات کا صرف ایک تہائی مقامی سطح پر تیار کر رہا ہے جبکہ باقی دو تہائی حصہ خوردنی تیل دوسرے ممالک سے درآمد کرناپڑتا ہے جس پر کثیر زرمبادلہ خرچ ہوتا ہے۔ توریا زائد خریف کی ایک اہم فصل ہے اور اس کے بیج میں 40تا44فیصد میٹھا تیل ہوتا ہے۔ یہ سرسوں کی کم دورانیہ میں پکنے والی قسم ہے اور اس کے بعد گندم کی کاشت بھی بروقت ہو جاتی ہے۔ توریا کی فصل تین ماہ میں تیا ر ہو جاتی ہے۔ زرعی ماہرین نے کاشتکاروں سے کہا ہے کہ وہ توریا کی کاشت اگست کے آخری ہفتہ تک ضرور مکمل کر لیں جبکہ توریا کی قسم ”توریا ایس اے “پنجاب کے تمام آبپاش علاقوں میں کامیابی سے کاشت کی جا رہی ہے۔ کاشتکار جدید زرعی ٹیکنالوجی سے استفادہ کر کے فی ایکڑ پیداوار میں 10 سے15من اضافہ کر سکتے ہیں۔ توریا کی کاشت وسط اگست سے شروع ہوجاتی ہے کیونکہ اس میں گرمی کی شدت برداشت کرنے کی صلاحیت دوسری سرسوں کی اقسام سے زیادہ ہوتی ہے اور اس کا اگاو بھی متاثر نہیں ہوتا۔