Tuesday, January 18, 2022
براہراست ٹی وی براہراست نشریات(UK) آج کا اخبار English News
English News آج کا اخبار
براہراست ٹی وی براہراست نشریات(UK)

رواں سال بجلی کی اوسط پیداوار 16 ہزار، شارٹ فال 6ہزار میگاواٹ تک رہا

رواں سال بجلی کی اوسط پیداوار 16 ہزار، شارٹ فال 6ہزار میگاواٹ تک رہا
December 22, 2016

اسلام آباد (92نیوز) حکومت کا دعوی ہے کہ تین برسوں میں 2599 میگا واٹ بجلی سسٹم میں شامل کی۔ آئندہ سال سسٹم میں 8500 میگاواٹ بجلی مزید شامل ہو جائے گی۔ 2016 میں ونڈ پاور کے علاوہ کوئی منصوبہ مکمل نہیں ہوا۔

تفصیلات کے مطابق وزارت پانی و بجلی کے اعدادوشمار کے مطابق حکومت نے 2013 میں 480 ارب روپے کا سرکلر ڈیٹ ادا کیا جس سے نجی بجلی گھروں نے 4 ہزار میگاواٹ اضافی بجلی پیدا کرنا شروع کر دی۔ ان تین برسوں میں 5 نئے پاور پلانٹ سسٹم میں شامل ہوئے جن میں 747 میگاواٹ گدو پاور پلانٹ، 425 میگاواٹ نندی پور، 100 میگاواٹ قائداعظم سولر، 477 میگاواٹ ونڈ اور 550 میگاواٹ گدو بند پاور پلانٹ کی بحالی شامل ہے۔

اعدادوشمار بتاتے ہیں کہ 2013 سے اب تک ٹرانسمیشن اور ڈسٹری بیوشن سسٹم کو بہتر کرنے سے ایک فیصد لاسز میں کمی ہوئی۔ سرکلر ڈیٹ کو 329 ارب روپے سے نہیں بڑھنے دیا گیا۔ دوسری جانب 2013 میں بجلی کی طلب 21000 میگاواٹ تھی جو کہ اب بڑھ کر 24ہزار میگاواٹ ہو چکی ہے۔ بجلی پیدا کرنے کی کل صلاحیت 24 ہزار میگاواٹ ہے۔ اس کے باوجود رواں سال میں بجلی کی اوسط پیداوار 11 سے 16 ہزار میگاواٹ تک رہی۔

صرف ایک دن ستمبر میں 17ہزار میگاواٹ بجلی پیدا کی گئی اور بجلی کا شارٹ فال اوسط 5سے6ہزار میگاواٹ تک رہا۔ فرنس آئل سستا ہونے کی وجہ سے فیول پرائس ایڈجسٹمنٹ کی مد میں بجلی کی قیمتوں میں کمی تو کی گئی لیکن بجلی کا بنیادی ٹیرف کم نہ کرکے ریلیف کا دعوی بھی ہاتھ کی صفائی نکلا کیونکہ فیول پرائس ایڈجسٹمنٹ کا ریلیف عام صارف کو نہیں ملتا۔

رواں سال صنعتی شعبے کے لیے لوڈشیڈنگ صفر رکھنے اور بجلی کی قیمتوں میں 3 روپے فی یونٹ کمی کرنے کا دعوی بھی سراب نکلا۔ وزارت پانی و بجلی کے حکام بتاتے ہیں کہ آئندہ سال موسم گرما تک 8500 میگاواٹ مزید بجلی سسٹم میں شامل ہو جائے گی اور طلب و رسد کا فرق ختم ہو جائے گا۔ گھریلو صارفین کو بلاتعطل بجلی فراہم کرنے کی کوشش کریں گے۔