Friday, December 2, 2022

راولپنڈی،11سالہ گھریلو ملازمہ پر مبینہ طور پر سرکاری خاتون افسر اورخاوند کا تشدد

راولپنڈی،11سالہ گھریلو ملازمہ پر مبینہ طور پر سرکاری خاتون افسر اورخاوند کا تشدد
راولپنڈی ( 92 نیوز ) راولپنڈی میں معصوم گھریلو ملازمہ پر تشدد کا ایک اور واقعہ سامنے آ گیا ، کنزہ کو مبینہ طور پر سرکاری خاتون افسر اور اُس کے خاوند نے تشدد کا نشانہ بنایا ، بچی کی حالت نازک ہوئی تو اُسے والد کے حوالے کر دیا، تاہم سی پی او راولپنڈی نے واقعے کا سخت نوٹس لے لیا ۔ معصوم گھریلو ملازم بچوں پر تشدد کا سلسلہ تھم نہ سکا ، راولپنڈی میں 11 سالہ بچی کنزہ پر تشدد کا  ایک اور واقع سامنے آ گیا ، معصوم کنزہ پر سرکاری  خاتون افسر اور اُس کے خاوند نے ظلم کے پہاڑ ڈھا دیئے ۔ معصوم بچی کے چہرے اور سر پر زخموں کے نشان  اُس پر کئے جانے والے تشدد کی داستان سنا رہے ہیں   ۔ تاہم کنزہ بھی اپنی زبان سے  اپنے سے روا رکھے جانے والے سلوک کی کہانی بھی معصومانہ انداز سے سناتی ہے  ۔ معصوم کنزہ پر تشدد اتنا کیا گیا کہ اُس کی حالت نازک ہو گی تو خاتون اور اُسکے خاوند نے  اُسے باپ کے حوالے کر دیا ، کنزہ کا  غریب باپ زخمی بیٹی کو لے کر آبائی علاقے سمندری روانہ ہو گیا۔ کنزہ پر تشدد کی خبر سامنے آئی تو سی پی او راولپنڈی نے نوٹس  لیا  اورمیاں بیوی کے خلاف کارروائی نہ کرنے  پر تھانہ ایئر پورٹ کے اے ایس آئی کو معطل کر تے ہوئے ٹیم کنزہ کو سمندری سے واپس لانے کے  لیئے روانہ کر دی۔ سی پی او  کا کہنا ہے کہ جرم ثابت ہونے پر میاں بیوی کے خلاف قانون کے مطابق کارروائی کی جائے گی۔