Sunday, October 2, 2022

دھرنا آپریشن کے بعد مبینہ ہلاکتیں ، موجودہ اور سابق وزرائے داخلہ آمنے سامنے

دھرنا آپریشن کے بعد مبینہ ہلاکتیں ، موجودہ اور سابق وزرائے داخلہ آمنے سامنے

اسلام آباد( 92 نیوز ) دھرنا آپریشن کے بعد مبینہ ہلاکتوں کے معاملے میں موجودہ اور سابق وزرائے داخلہ آمنےسامنے آگئے ۔
چودھری نثارنے کہا کہ ان کے گھر ہلاکت تو درکنار کوئی زخمی بھی نہیں ہوا ۔ وزیرداخلہ نااہلی چھپانے کیلئے بے بنیاد بیانات سے گریز کریں ۔
چودھری نثار نے مزید کہا کہ تین گھنٹے میں دھرنا ختم کرنے کےدعویدارکارروائی کا ملبہ عدالت پر ڈال رہے ہیں ۔
وزیر داخلہ احسن اقبال نے کہا کہ آپریشن میری منشاکے مطابق نہیں ہوا ۔ انتظامیہ نے عدالتی حکم پر عمل کرنے کی صرف اطلاع دی۔ ہلاکتیں کہاں ہوئیں،اس کی اعلیٰ سطح پر انکوائری ہو رہی ہے ۔
احسن اقبال نے مزید کہا کہ چودھری نثار سینئرسیاستدان ہیں،ان کےبیان پر تبصرہ نہیں کروں گا
۔چودھری نثار نے اپنے بیان میں کہا کہ۔ کیا یہ وہی شخص نہیں جوکہتا تھا 3 گھنٹے میں دھرنا ختم کرادوں گا۔اس پر احسن اقبال کا جواب آیا کہ پی ٹی آئی کادھرنا ہوا تو کون وزیرداخلہ تھا؟ وہ کتنے دنوں میں ختم ہوا ؟۔ اس کے ساتھ ساتھ احسن اقبال نے کہا کہ فیض آبادآپریشن ان کے حکم پر نہیں ہوا،
آپریشن آئی جی پولیس اور کمشنر نے عدالتی حکم پر کیا۔