Saturday, October 1, 2022

خورشیدشاہ کو ایک بار پھر کارکنوں نے گھیر لیا، سخت سوالات کی بوچھاڑ کردی

خورشیدشاہ کو ایک بار پھر کارکنوں نے گھیر لیا، سخت سوالات کی بوچھاڑ کردی
پنو عاقل ( 92 نیوز ) عوامی عدالتوں نے فیصلے سنانا شروع کردیئے ، سندھ میں پیپلزپارٹی کے رہنماؤں کو انتخابی مہم کے دوران تلخ سوالات سننا پڑ رہے ہیں، خورشید شاہ کو آج پھر پنوعاقل میں ووٹرز نے آئینہ دکھا دیا ، لیکن غریب ووٹر کا سوال سائیں کے سپورٹرز کے نعروں کی نذر ہوگیا ۔ عوامی عدالتوں پر یقین رکھنے والے اب عوامی عدالتوں کے فیصلے پر بھی لاجواب ہو گئے ہیں ،  سندھ میں پیپلزپارٹی کے رہنماؤں کو انتخابی مہم کے دوران مشکلات کا سامنا ہے ۔ سید خورشید شاہ کو پنوعاقل میں دوسری مرتبہ تلخ سوالات کا سامنا کرنا پڑا ، سابق اپوزیشن لیڈر نے جلسے سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ نوکریاں نہیں دے سکے لیکن پانی دیا ہے، جس پر ووٹر نے شکوہ کرتے ہوئے کہا کہ ہماری زمینوں کو تو پانی بھی نہیں مل رہا، جبکہ وڈیرے اپنی زمینیں سیراب کررہے ہیں ۔ غریب آبادگار کا سوال سائیں کے سپورٹرز کی جانب سے ’’خورشید شاہ زندہ باد‘‘ کے نعرے میں دب کر رہ گیا ۔ دو روز قبل بھی پنوعاقل ہی میں خورشیدشاہ کو ووٹرز کی جانب سے حلقے میں کوئی ترقیاتی کام نہ کرانے کا تلخ سوال سننا پڑا، جس پر انہوں نے مسکرا کر بات ٹال دی اور چلتے بنے تھے ۔ گزشتہ روز سابق وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ پر بھی ووٹرز نے سوالات کی بوچھاڑ کردی، جس کا غصہ انہوں نے ویڈیو بنانے والے صحافی کا موبائل چھین کر نکالا۔