Thursday, January 20, 2022
براہراست ٹی وی براہراست نشریات(UK) آج کا اخبار English News
English News آج کا اخبار
براہراست ٹی وی براہراست نشریات(UK)

خطوں کی لائن لگانےوالا خود نہیں آرہا ،کیا ہم سب دوحا چلےجائیں : جسٹس عظمت سعید

خطوں کی لائن لگانےوالا خود نہیں آرہا ،کیا ہم سب دوحا چلےجائیں : جسٹس عظمت سعید
July 20, 2017

اسلام آباد(92نیوز)سپریم کورٹ میں پاناما عملدرآمد کیس کی سماعت کے دوران آج پھر قطری خط کا تذکرہ ہوتا رہاجسٹس شیخ عظمت سعید نے ریمارکس دیئےکہ خطوں کی لائن لگانے والا خود نہیں آرہا کیا ہم سب دوحہ چلے جائیں،،،؟

تفصیلات کےمطابق قطری ون ،قطری ٹواورپھر قطری تھری قطری شہزادے حمد بن جاسم الثانی  نے خطوط کی قطار لگادی خط آتے رہے مگر نہیں آیاتو شہزادہ ۔ سپریم کورٹ کے تین رکنی بنچ کے سامنے آج پھر قطری خط کا تذکرہ چھڑ گیاجسٹس شیخ عظمت سعید نے وزیراعظم  کے بچوں کے وکیل سلمان اکرم راجہ سے استفسار کیا کہ  شیخ حماد کو بلایا مگر وہ نہ آیا پھر خط لکھا کہ پاکستانی سفارتخانے ہی آجاؤمگر  قطری شہزادے نے سفارتخانے آنے سے بھی انکار کردیا۔ جسٹس شیخ عظمت سعید نے سلمان کرم راجہ کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ قطری شہزادہ نہیں آرہا تو کیا ہم سب دوحہ چلے جائیں ۔۔؟

اس پر سلمان اکرم راجہ بولے قطری شہزادے نے کہا دوحہ چلےآئیں جس پر جسٹس اعجاز الاحسن  نے ریمارکس دیئے کہ قطری شہزادہ توپیرس میں ہےشہزادے نے عدالتی دائرہ اختیار بھی چیلنج کیا۔ کمرہ عدالت میں صورتحال اس وقت دلچسپ  ہو گئی جب جسٹس اعجاز الاحسن نے ریمارکس دیئے کہ قطری شہزادہ ویڈیو بیان ریکارڈ نہیں کرارہا شاید کیمرےمیں اس کی شکل اچھی نہ آتی ہو۔ جسٹس اعجاز الاحسن کے ان ریمارکس پر کمرہ عدالت قہقہوں سے گونج اٹھا۔ سلمان اکرم راجا نے دلائل جاری رکھے اور کہا کہ قطری شہزادہ  بطور گواہ عدالت میں پیش نہیں ہو گا۔ جس پر جسٹس اعجاز الاحسن  بولے ، قطری شہزادہ تو آپ کا خاص گواہ ہے۔ جسٹس عظمت سعید نے کہا بتایا جائے کیا رقم ہینڈ کیری کے ذریعے منتقل ہوئی جس پرسلمان اکرم راجہ  نے کہا  کہ  ان کے موکل کا موقف ہے کہ رقم شیخ حمد کے ذریعے منتقل کی گئی جس پر جسٹس عظمت شیخ سعید نے کہا کہ اکاؤنٹ سے رقم کی آمد دیکھی جائے گی اور خط میں قطری شہزادے نے رقم فلیگ شپ کمپنی کو منتقلی کا نہیں لکھا۔