Friday, October 7, 2022

خصوصی عدالت کی تشکیل کو کالعدم قرار دینے کا فیصلہ سپریم کورٹ میں چیلنج

خصوصی عدالت کی تشکیل کو کالعدم قرار دینے کا فیصلہ سپریم کورٹ میں چیلنج
 اسلام آباد (92 نیوز) خصوصی عدالت کی تشکیل کو کالعدم قرار دینے کا فیصلہ سپریم کورٹ میں چیلنج کر دیا گیا۔ سابق صدر پرویز مشرف کو سنگین غداری کیس میں خصوصی عدالت کا سزائے موت سنانے کے معاملے میں پاکستان بار کونسل نے خصوصی عدالت کی تشکیل اور کارروائی کو کالعدم قرار دینے کے فیصلے کے خلاف سپریم کورٹ سے رجوع کر لیا ۔ بار کونسل نے عدالت عظمی سے فیصلے کے خلاف اپیل سماعت کے لیے منظور کرنے اور لاہور ہائی کورٹ کا فیصلہ کالعدم قرار دینے کی استدعا کر دی۔ پاکستان بار کونسل کی جانب سے درخواست میں سابق صدر پرویز مشرف ، سیکرٹری داخلہ، خصوصی عدالت اور صدر پاکستان کو فریق بنایا گیا ہے۔ درخواست میں کہا گیا ہے کہ لاہور ہائیکورٹ کا خصوصی عدالت کی تشکیل کو غیر قانونی قرار دینے کا فیصلہ قانون کے برعکس ہے۔ ہائیکورٹ کو معاملہ میں مداخلت کا اختیار نہیں تھا۔ پرویز مشرف  نے تین نومبر 2007  کو ایمر جنسی لگائی۔ سپریم کورٹ اور خصوصی عدالت نے پرویز مشرف کے خلاف فیصلہ دیا۔