Thursday, January 27, 2022
براہراست ٹی وی براہراست نشریات(UK) آج کا اخبار English News
English News آج کا اخبار
براہراست ٹی وی براہراست نشریات(UK)

حکومت نے ریگولیٹری اتھارٹیز کی آزادی  پر کلہاڑا چلادیا

حکومت نے ریگولیٹری اتھارٹیز کی آزادی  پر کلہاڑا چلادیا
December 20, 2016

اسلام آباد(92نیوز)حکومت نے ریگولیٹری اتھارٹیز کی آزادی ختم کردی، بیک جنبش قلم پانچ اہم اتھارٹیز کو متعلقہ وزارتوں کے ماتحت کر دیا۔ نوٹیفیکیشن کی کاپی 92 نیوز کو موصول ہو گئی۔

تفصیلات کےمطابق حکومت نے ریگولیٹری اتھارٹیز کی آزادی پر کاری وار کرتے ہوئے صارفین کے تحفظ کے اداروں کو متعلقہ وزارتوں کے ماتحت کر دیا ہے۔ وزیراعظم نے رولز آف بزنس میں ترمیم کرتے ہوئے اتھارٹیز کی متعلقہ وزارتوں کو منتقلی کی منظوری دی۔ 92 نیوز کو موصول ہونے والے نوٹیفیکیشن کے مطابق نیپرا اب وزارت پانی و بجلی کے ماتحت کام کرے گا، اوگرا کو وزارت پیٹرولیم کا حصہ بنا دیا گیا ہے، پاکستان ٹیلی کمیونیکیشن اتھارٹی اور فریکیونسی ایلوکیشن بورڈ  کو وزارت آئی ٹی کے ماتحت کردیا گیا ہے۔ پاکستان کے سرکاری اداروں میں ٹھیکوں اور خریداری کو دیکھنے والے ادارے پیپرا کو بھی وزارت خزانہ کےماتحت کر دیا گیا ہے۔ اس سے قبل یہ ادارے کابینہ ڈویژن کے زیر انتظام آزادانہ کام کر رہے تھے اور اپنے فیصلوں میں خود مختار تھے۔ پرویز مشرف کے دور میں ان اداروں کا قیام ایکٹ آف پارلیمنٹ کے تحت لایا گیا تھا، جس کے سربراہ کا تقرر وزیراعظم کرتا ہے جبکہ ارکان صوبوں سے نامزد ہو کر آتے ہیں۔ ان ریگولیٹری اتھارٹیز کے پاس عدلیہ کے بھی اختیارات ہوتے ہیں جن کو صرف ہائی کورٹ یا سپریم کورٹ میں چیلنج کیا جا سکتا ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ مرضی کے فیصلے کرانے کیلئے ریگولیٹرز کی خود مختاری ختم کی گئی، ذرائع کے مطابق صوبوں کی منظوری کے بغیر ریگولیٹرز کی خودمختاری کا خاتمہ آئین کے منافی ہے اور صوبوں نے ریگولیٹرز کی خود مختاری ختم کرنے کی مخالفت کی تھی، خودمختاری ختم ہونےکےبعد ریگولیٹرز حکومتی احکامات ماننے کے پابند ہوں گے۔ ورلڈ بینک نے بھی ریگولیٹرز کو متعلقہ وزارتوں کے ماتحت کرنے کی مخالفت کی تھی۔