Monday, October 3, 2022

حقیقی جمہوریت میں لیڈر میرٹ پر آتا ہے ، عمران خان

حقیقی جمہوریت میں لیڈر میرٹ پر آتا ہے ، عمران خان
چارسدہ (92 نیوز) چیئرمین تحریک انصاف عمران خان نے کہا کہ حقیقی جمہوریت میں لیڈر میرٹ پر آتا ہے۔ چارسدہ میں جلسہ عام سے خطاب میں عمران خان نے سیاسی مخالفین پر خاندانی سیاست کے فروغ، اپنے بچوں کو آگے لانے  اور میرٹ کی دھجیاں بکھیرنے کا الزام لگایا۔ کپتان کے کہا کہ نواز شریف ، آصف زرداری ، مولانا فضل الرحمن اور اسفند یار کے ہوتے ہوئے کرپشن ختم نہیں کی جا سکتی ۔ نواز شریف قومی مجرم ہے اسے سہولت کیوں دی جائے ۔ نواز شریف اور زرداری پیسہ چوری کرکے بیرون ملک لے جاتے رہے۔ عمران خان نے کہا کہ یورپ میں جمہوریت مستحکم ہوئی اور مسلم ممالک میں بادشاہت کو فروغ ملا۔ کپتان نے کہا کہ قائداعظم محمد علی جناح پچھلی صدی کا سب سے عظیم لیڈر تھا ۔ قائداعظم اپنی قابلیت، ایمانداری کی وجہ سے لیڈر بنے ۔ قائداعظم ہی واحد لیڈر تھا جس نے پاکستان کو بنایا۔ عمران خان نے کہا کہ پاکستان کا بڑا مسئلہ یہ ہے کہ قائداعظم کے بعد کوئی لیڈر نہیں آیا، ذوالفقار علی بھٹو ایک لیڈر تھا اسکے مرنے کے بعد اسکے خاندان کے لوگ کیسے لیڈر ہو سکتے ہیں ۔ شریفوں کو لیڈر ضٰیاالحق نے بنایا ، شہبازشریف اشتہاروں کا لیڈر تھا، شہباز شریف کی ساری ترقی اشتہاروں میں ہوتی تھی، بجلی بھی اشتہاروں میں بن رہی تھی۔  40 ارب روپے اشتہاروں میں جھونک دیئے۔ چیئرمین تحریک انصاف نے کہا کہ بینظیر کا بیٹا جس نے پاکستان میں آج تک ایک کلو میٹر پیدل نہیں چلا ، وزیراعظم بننے کی تیاری کر رہا ہے۔ مریم نواز نے زندگی میں ایک گھنٹہ کام نہیں کیا وہ وزیراعظم بننے چلی ہیں۔ عمران خان نے کہا کہ اسفند یار ولی کا بیٹا، آفتاب شیر پاؤ کا بیٹا ، مولانا فضل الرحمان کا بھائی اور بیٹا بھی لیڈر ہے ، یہ کون سے جمہوریت ہے ۔ ن لیگ نے ابھی ریزرو سیٹ دی ہیں ، اس میں کوئی کسی کی بیوی، کسی کی بیٹی ہے ، پاکستان میں سیاست میں خاندانی سیاست ہے کوئی میرٹ نہیں ہے۔ کپتان نے کہا کہ لاہور کا سالانہ ترقیاتی فنڈ ساڑھے تین سو ارب روپے تھا، جبکہ پشاور کا سالانہ ترقیاتی فنڈ ایک سو دس ارب روپے تھا۔ یہ اپنے بچوں کو پاور میں لا رہے ہیں کیا ، کسی جمہوریت میں کوئی ایسا سوچ سکتا ہے۔ عمران خان نے کہا کہ کرپٹ مافیا کے پاس اپنوں کے سوا کوئی دوسرا لیڈر نہیں ہے ۔ ملک میں ادارے مضبوط کر کے دکھائیں گے۔