Friday, January 21, 2022
براہراست ٹی وی براہراست نشریات(UK) آج کا اخبار English News
English News آج کا اخبار
براہراست ٹی وی براہراست نشریات(UK)

جے آئی  ٹی ممبر عرفان منگی کو شريف خاندان کے خلاف ريفرنس دائر کرنے کی ذمہ داری مل گئی

جے آئی  ٹی ممبر عرفان منگی کو شريف خاندان کے خلاف ريفرنس دائر کرنے کی ذمہ داری مل گئی
July 31, 2017

اسلام آباد(92نیوز)بڑے کيس کی بڑی  تياری جے آئی  ٹی ممبر عرفان منگی کو شريف خاندان کے خلاف ريفرنس دائر کرنے کی ذمہ داری مل گئی،  ريفرنسز چھ ہفتوں ميں راولپنڈی اور اسلام آباد کی عدالتوں ميں دائر کيے جائيں گے۔

تفصیلا تکےمطابق اسلام آباد ميں چيئرمين نيب قمر زمان چوہدری کی زير صدارت ایگزیکٹو بورڈ کا اجلاس ہوا.جس ميں سابق وزیر اعظم محمد نواز شریف اور ان کے بچوں سمیت سابق وزیر خزانہ اسحاق ڈار  کے خلاف ريفرنس دائر کرنے کا معاملہ زير بحث آيا۔ نيب اعلاميے کے مطابق اجلاس ميں  چار ريفرنس دائر کرنے کا فيصلہ کيا گيا،چاروں ريفرنسز چھ ہفتوں ميں راولپنڈی اور اسلام آباد کی عدالتوں ميں دائر کيے جائيں گے۔ پہلا ريفرنس ايون فيلڈ پراپرٹيز پارک لين لندن  جبکہ دوسرا ريفرنس عزيزيہ اسٹيل ملز اور ہل ميٹل کمپنی سے متعلق ہے۔ تیسرا ریفرنس شریف فیملی کی 16 آف شور کمپنیز کے خلاف دائر کیا جائیگا جبکہ آخری ریفرنس اسحاق ڈار کے آمدن میں 90 ملین سے 830 ملیں اضافے کے خلاف دائر کیا جائیگا۔اجلاس میں بتایا گیا کہ اگر ثابت ہوا کہ کاشف قاضی ، شیخ سعید اور صدر نیشنل بینک  سعید احمد نے شریف فیملی کو فائدہ دیاتو ان کی خلاف بھی کارروائی کی جائے گی۔ ضرورت پڑنے پر ضمنی ریفرنس بھی دائر کئے جائنگے.

سپريم کورٹ کے حکم پرشريف خاندان کے خلاف ريفرنس دائر کرنے کے ذمے  ڈی جی نيب عرفان منگی کو سونپی گئی ہے۔6 ہفتوں میں ریفرنسز دائر کئے جائینگے جسکا فیصلہ 6 ماہ میں کیا جائیگا.