Sunday, December 4, 2022

جنسی ہراسانی کیس، میشا شفیع کے وکیل کے پیش نہ ہونے پر گلوکارہ میشا شفیع کو 10 ہزار روپے جرمانہ عائد

جنسی ہراسانی کیس، میشا شفیع کے وکیل  کے پیش نہ ہونے پر گلوکارہ میشا شفیع کو 10 ہزار روپے جرمانہ عائد

 لاہور (92 نیوز) جنسی ہراسانی کیس میں میشا شفیع کے وکیل  کے عدالت میں پیش نہ ہونے پر گلوکارہ میشا شفیع کو 10 ہزار روپے جرمانہ عائد کر دیا۔

 لاہور کی سیشن عدالت میں گلوکار و اداکارعلی ظفرکی میشا شفیع کے خلاف ہتک عزت کے دعویٰ کی سماعت ہوئی۔

 دوران سماعت میشا شفیع کے وکیل عدالت میں پیش نہ ہوئے جس پر علی ظفر کے وکیل نے اعتراض کیا ۔ عدالت نے گلوکارہ کو کیس میں تاخیری حربے استعمال کرنے پر 10 ہزار روپے کا جرمانہ عائد کرتے ہوئے میشا شفیع کو گواہان پرجرح کے لیے آخری موقع فراہم کردیا گیا۔

 بعدازاں کیس کی مزید سماعت 17 اپریل تک ملتوی کر دی گئی۔

قبل ازیں سیشن کورٹ لاہور نے گلوکارہ میشا شفیع کو دس کروڑ روپے ہرجانہ ادا کرنے سے متعلق جواب جمع کروانے کا آخری موقع دیا تھا۔

 سیشن کورٹ لاہور میں گلوکارہ میشا شفیع کے خلاف دس کروڑ ہرجانہ ادا کرنے سے متعلق کیس کی سماعت ہوئی تھی۔ میشا شفیع کے جانب سے جواب جمع نہ کرانے پرعدالت نے اظہار برہمی کرتے ہوئے میشا شفیع کو جواب جمع کروانے کا آخری موقع دیا تھا۔

 گلوکار و اداکار علی ظفر نے گلوکارہ میشاشفیع کے خلاف دس کڑور ہرجانے کا دعویٰ کر رکھا ہے۔ درخواست گزار کا مؤقف ہے کہ میشا شفیع نے جنسی حراساں کرنے کے بے بنیاد الزامات عائد کئے جس سے شہرت متاثر ہوئی۔

 درخواست میں استدعا کی گئی تھی کہ عدالت میشا شفیع کو دس کروڑ روپے ہرجانہ ادا کرنے کا حکم دے۔