Friday, January 21, 2022
براہراست ٹی وی براہراست نشریات(UK) آج کا اخبار English News
English News آج کا اخبار
براہراست ٹی وی براہراست نشریات(UK)

جاوید کیانی کے جے آئی ٹی کے سامنے  چونکا دینے والے انکشافات

جاوید کیانی کے جے آئی ٹی کے سامنے  چونکا دینے والے انکشافات
July 13, 2017

اسلام آباد(92نیوز)پانامہ لیکس کے اہم گواہ جاوید کیانی نے کب کاروبار شروع کیا؟؟ کتنے جعلی اکاﺅنٹس بنائے؟؟ رقم کہا ں اور کس کے اکاﺅنٹ میں بھجوائی نائنٹی ٹو نیوز سے سب پتہ لگا لیا ۔

تفصیلات کےمطابق جے آئی ٹی کی تحقیقاتی رپورٹ میں آل پاکستان شوگر ملز ایسوسی ایشن کے چیئرمین جاوید کیانی کے بیان کا بھی تذکرہ ہے۔ جاوید کیانی نے اپنے بیان میں جے آئی ٹی کو بتایا کہ انہوں نے 1978ءمیں پارٹنر شیخ طاہر سے مل کرٹینٹ ایکسپورٹ کا کاروبار شروع کیا۔ انہی کی شراکت داری میں دو ٹیکسٹائل ملز اور ایک چنار شوگر مل لگائی 1992ءمیں ان کے امریکہ میں مقیم انکل شیخ سعید نے 20لاکھ ڈالر بھیجے جنہیں ڈالر بیئرز سرٹیفکیٹ میں منتقل کرنا تھا تاہم مارکیٹ چیک کی تو ڈیلر 2فیصد چارج کررہے تھے۔ جاوید کیانی کے مطابق ان کا حبیب بینک لاہور میں ایک اکاﺅنٹ تھا بینک افسر سیف ا لرحمان کے مشورے پر اصغر علی ، سلمان ضیاءاور محمد رمضان کے نام سے بے نامی اکاﺅنٹس کھولے۔ ان اکاﺅنٹس میں لین دین ان کی ہدایت پر ہوئی تاہم انہوں نے کسی چیک پر دستخط نہیں کئےیہ ا کاﺅنٹس 1994ءمیں بند ہوگئے پھروہ شیخ سعید کے کہنے پر ملک چھوڑ کر 1997ءتک لندن میں قیام پذیر ہوگئے۔ جاوید کیانی نے بتایا کہ ان کےخلاف ایف آئی اے کی جانب سے قائم مقدمات عدالت نے ختم کردیئے۔ ان کے انکل شیخ سعید کے کہنے پر انہوں نے کئی بار اوور سیز کمپنیوں کو سلمان ضیاءکے اکاﺅنٹ میں رقم بھجوائی دوران تفتیش انہوں نے قاضی فیملی کے ساتھ تعلقات سے انکاربھی کیا۔ جاوید کیانی کے مطابق نوازشریف کے وزارت اعلیٰ کے دور میں ان کے انکل شیخ سعید نے انہیں امریکی شہری فل بری سے ملوایا جو لاہور اور فیصل آباد میں سرمایہ کاری کرنا چاہتا تھا 1992ءمیں فل بری کے ہمراہ رابرٹ نامی امریکی شہری بھی آیا۔دونوں نے اسلام آباد میں میاں نوازشریف سے ملاقات بھی کی وہ اپنے ساتھ ڈالر بیئرز سرٹیفکیٹ بھی لائے تھے۔