Wednesday, October 5, 2022

تین نوجوانوں پر بدترین تشدد: نیچے سے اوپر تک محکمہ ڈی ایس پی کو بچانے میں لگ گیا

تین نوجوانوں پر بدترین تشدد: نیچے سے اوپر تک محکمہ ڈی ایس پی کو بچانے میں لگ گیا

کراچی (92 نیوز) فیروز آباد تھانے کا ڈی ایس پی جلاد  بن گیا، نوجوانوں کو برہنہ کر کے بدترین تشدد کا نشانہ  بنا ڈالا، طاقت کے نشے میں چور ڈی ایس پی کے خلاف  گھیرا تنگ ہوا تو وہ بزدلوں کے طرح حیدر آباد فرار ہو گیا۔ پولیس نے پیٹی بھائی کو بچانے کے لئے اس کے بھانجے کے خلاف مقدمہ درج کر لیا۔

یہ ہے 21 ویں صدی کا کراچی جہاں فیروز آباد تھانے کے ڈی ایس پی  یعقوب جٹ نے اپنا ہی قانون بنا لی۔ طاقت کے نشے میں چور ڈی ایس پی نے 3 نوجوانوں کو برہنہ کر کے بدترین تشدد کا نشانہ بنا ڈالا۔

نوجوانوں کا قصور صرف یہ کہ، انہوں نے ڈی ایس پی کے رشتہ دار سے تلخ کلامی کی۔

ڈی ایس پی اس پر ایسا بھڑکا کہ نوجوانوں کو اٹھا کر تھانے لے آیا۔ پھر ہاتھ میں بیلٹ اٹھائی اور برہنہ کرکے نوجوانوں پر ایسا تشدد کیا کہ آسمان بھی کانپ اٹھا۔

بے بس نوجوانوں پر تشدد کرنے والے ڈی ایس پی  معطلی کے بعد گرفتاری کا خدشہ ہوا تو بزدلوں کی طرح حیدر آباد فرار ہو گیا۔

تھانے نوجوانوں پر بدترین تشدد کے معاملے پر حکومت سندھ کے اکابرین نے بھی ہونٹ سی لئے

اور تو اور ہر معاملے پر ٹویٹ کرنے والے بلاول بھٹو زرداری کا ٹوئیٹر بھی انسانیت سوز واقعے پر خاموش ہیں۔