Monday, January 17, 2022
براہراست ٹی وی براہراست نشریات(UK) آج کا اخبار English News
English News آج کا اخبار
براہراست ٹی وی براہراست نشریات(UK)

بھارت: ناگ پور میں مسلمان کوانتہاپسندوں نے مار مار کر ادھ موا کردیا

بھارت: ناگ پور میں مسلمان کوانتہاپسندوں نے مار مار کر ادھ موا کردیا
July 13, 2017

نئی دہلی (ویب ڈیسک)بھارت میں نریندر مودی کی  وزارت  عظمیٰ  کے دوران مسلمانوں پر عرصہ حیات تنگ کردیا گیا،ناگ پور شہر میں ہندو انتہاپسندوں  نے گائے کا گوشت  لے جانے کا جھوٹ الزام لگاکر  ایک مسلمان شخص کو مار مار کر ادھ  موا کردیا ۔

تفصیلات کےمطابق ریاست مہاراشٹر کے  شہر ناگ پورمیں گائے کے پجاریوں اور مودی کے حواریوں  نے ایک بے گناہ مسلمان کو صرف اس لیے شدید تشدد کا نشانہ بنایا کہ وہ گوشت لے جارہا تھا۔ نام نہاد گائےرکھشا کمیٹی میں شامل انتہا پسند ہندوئوں نے چالیس سالہ سہیل شاہ کو  بری طرح مارا پیٹا۔ جنونی اور وحشی غنڈوں کے چنگل میں پھنسا سہیل شاہ  چیختا چلاتا رہا کہ  یہ گائے کا گوشت نہیں لیکن کسی نے اسکی نہیں سنی،  پولیس نے واقعے میں ملوث چار افراد کی گرفتاری کا  دعویٰ کیا  جبکہ  سہیل شاہ سے ملنے والے گوشت کو فرانزک ٹیسٹ کیلئے لیبارٹی بھجوادیا ۔۔یاد رہے کہ  عید سے ایک روز قبل ہریانہ میں  انتہا پسند ہندوئوں نے ٹرین میں سفر کرنیوالے سولہ سالہ جنید کو گائے کا گوشت لیجانے کے شبہ میں تشدد کرکے مارڈالا تھا ۔ادھر انتہا پسند مودی حکومت کی خوشنودی حاصل کرنے کیلئےائیر انڈیا نے اپنی فلائٹس میں گوشت  سے بنی ڈشز پر پابندی لگادی ہے۔