Sunday, December 4, 2022

بھارت : فالج کےمریض کو ٹھیک کرنےکیلئےمسلمان بچی کو ذبح کرکے جہالت بھینٹ چڑھا دیا

بھارت : فالج کےمریض کو ٹھیک کرنےکیلئےمسلمان بچی کو ذبح کرکے جہالت بھینٹ چڑھا دیا
نئی دہلی (ویب ڈٰیسک)بھارتیوں نے توہم پرستی اور درندگی کی ایک اور داستان رقم کردی جادوگر کے کہنےپرفالج کے مریض کو ٹھیک کرنے کیلئے مسلمان بچی کو ذبح کرکے  جہالت کی بھینٹ چڑھا دیا۔ پولیس نےجادوگرمریض،مریض کی بہن اور بھائی سمیت 4افراد کوگرفتارکرلیا۔ تفصیلات کےمطابق بھارتی ریاست کرناٹک کے ضلع گمادی میں ایک توہم پرست بھارتی خاندان نے فالج زدہ شخص کی صحتیابی کیلئے ڈاکٹروں کے بجائے ایک جادوگر سے رابطہ کیا تو اس نے اس مرض کا علاج ایک معصوم بچی کا قتل تجویز کیا۔ خود غرض خاندان نے جادوگر کی ہدایات پر اندھادھند عمل کرتے ہوئے 10سالہ عائشہ کو پہلے اغواکیااور پھر ایک مقبرے پر لے جاکراس کاگلاکاٹ دیا بچی نے تڑپ تڑپ کر جان دیدی تو لاش کو کچرے میں پھینک کرواپس آگئے۔ بچی کی لاش ملنے اور معاملے کا پتہ چلنے پر علاقہ مکینوں کی بڑی تعداد قاتل خاندان کے گھر کے باہر جمع ہوگئی اور خوب پتھرائو کیا جس پر پولیس نے موقع پر پہنچ کر مظاہرین پر قابوپایا۔ ادھر آئی جی کرناٹک پولیس سیمنت کمار کا کہنا ہے کہ واقعہ کی رپورٹ ملتے ہی ہم نے کارروائی کا آغاز کردیا تھا اور کارروائی میں چارافرادپکڑے گئے جبکہ آلہ قتل اور دیگر اشیابھی ملی ہیں۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق گرفتار افراد میں جادوگر،مریض اس کی بہن اور بھائی بھی شامل ہیں۔