Thursday, January 20, 2022
براہراست ٹی وی براہراست نشریات(UK) آج کا اخبار English News
English News آج کا اخبار
براہراست ٹی وی براہراست نشریات(UK)

ایک صدی بعد آئن سٹائن کی پیش کردہ گریوی ٹیشنل ویوز کا وجود ثابت ہونے کا امکان

ایک صدی بعد آئن سٹائن کی پیش کردہ گریوی ٹیشنل ویوز کا وجود ثابت ہونے کا امکان
February 11, 2016
واشنگٹن (ویب ڈیسک) آئن سٹائن ایک ایسی نابغہ روزگار شخصیت تھے جن کو دنیا سے کوچ کیے 100 برس سے زائد عرصہ بیت چکا مگر آج بھی سائنسدان ان کے پیش کیے گئے خیالات کو مختلف زاویوں سے پرکھنے میں مصروف ہیں۔ ثقلی امواج (گریوی ٹیشنل ویوز) کا وجود ہے یا نہیں سائنسدان آج اس راز سے پردہ اٹھانے کیلئے واشنگٹن میں جمع ہو گئے ہیں۔ تفصیلات کے مطابق تاریخ میں پہلی بار ثقلی امواج کا وجود آج (گیارہ فروری 2016ئ) کو ثابت ہو سکتا ہے۔ آئن سٹائن نے جنرل ریلیٹیویٹی تھیوری (عمومی نظریہ اضافت) 1915ءمیں پیش کی۔ ان کی پیش کردہ تھیوری کے تمام حصے سائنس ثابت کر چکی ہے سوائے گریوی ٹیشنل ویوز کے وجود کے۔ آئن سٹائن کا کہنا تھا کہ مادہ اور وقت پیچیدہ طور پر ایک دوسرے سے منسلک ہیں۔ کائنات میں سپیس ٹائم کا ڈھانچہ چارسمتی ہے جس کے باعث مادہ‘ انرجی اور ثقلی لہریں سپیس ٹائم پر ایک دوسرے سے باہم مربوط ہیں۔ آئن سٹائن کے مطابق گریوی ٹیشنل ویوز ثقلی طاقت سے خلائی اجسام کو کائنات میں نہایت تیزرفتاری سے دوردراز پہنچا دیتی ہیں۔ اس کو ہم اس مثال سے سمجھ سکتے ہیں کہ اگر پانی کی ایک بوند تالاب میں گرائی جائے تو اس عمل کے نتیجے میں پیدا ہونے والی سلوٹیں پانی کی سطح پر پھیلتی ہوئی کناروں کی طرف چلی جاتی ہیں۔ ثقلی امواج بالکل اسی طرح کام کرتی ہیں۔ جب دو بلیک ہولز آپس میں ٹکراتے ہیں تو اس ٹکراﺅ کے نتیجے میں متاثرہ حصے سے گریوی ٹیشنل ویوز انرجی کو سپیس ٹائم پر روشنی کی رفتار سے لے جاتی ہیں۔ سائنسدانوں کے مطابق گریوی ٹیشنل ویوز کو ثابت کرنے کا یہ ایک بالواسطہ مشاہدہ ہے کیونکہ ان ویوز کو پکڑنا تاحال ممکن نہیں ہو سکا۔ گریوی ٹیشنل ویوز کے وجود کو دریافت کرنا سائنس میں ایک نئی دنیا کا دروازہ کھولنے کے مترادف ہے۔ واضح رہے کہ گریوی ٹیشنل ویوز کا وجود آئن سٹائن کی تھیوری کا لازمی حصہ ہے۔ امید ظاہر کی جا رہی ہے کہ واشنگٹن ڈی سی میں واقع نیشنل سائنس فاﺅنڈیشن میں دنیابھر سے اکٹھے ہونے والے سائنسدان آئن سٹائن کی تھیوری میں پیش کردہ ثقلی امواج (گریوی ٹیشنل ویوز) کو ثابت کرنے کا اعلان کر دیں گے۔