Tuesday, November 29, 2022

ایک اور بھارتی فوجی افسروں کیخلاف پھٹ پڑا

ایک اور بھارتی فوجی افسروں کیخلاف پھٹ پڑا
نئی دہلی (ویب ڈٰیسک)بھارتی فوج کے افسروں کے سیاہ کارناموں کی ایک اور ویڈیو منظر عام پرآگئی ۔ ایک اور سپاہی اپنے افسروں کی زیادتیوں اور بدعنوانیوں کے خلاف پھٹ پڑا۔ فوجی سندھوان جوگی داس کا کہنا ہے افسر جوانوں کو انسان ہی نہیں سمجھتے۔ بھارتی معاشرہ ہزاروں برسوں سے ذات پات میں بٹا ہوا ہے اوراس معاشرتی تفریق  نے بھارتی فوج کو بھی بری طرح اپنی لپیٹ میں لے رکھا ہے ۔ جہاں آئے روز بھارتی فوجیوں کی ویڈیوز منظر عام پر آتی ہیں جن میں وہ اپنے افسروں کی زیادتیوں کا پردہ فاش کرتے نظر آتے ہیں ۔ سپاہی سندھوان جوگی داس اس فہرست میں تازہ اضافہ ہے ،،جس کا کہناہے کہ اچھا کھانا اور پھل تو افسر کھا جاتے ہیں اور جوانوں کو ملتا ہے گھٹیا قسم کا کھانا اور پھل ۔ جوگی داس بھی وہی دہائی دیتا نظر آیا کہ افسروں نے جوانوں کو ذاتی غلام بنا رکھا ہے۔ جوگی داس کاکہنا تھا کہ وزیر اعظم آفس  میں بھی وہ اپنی درخواست لیکر گیا جس پر اعلیٰ افسر اسکی جان کے دشمن بن گئے ہیں۔ یوں لگتا ہے کہ اخلاقی دیوالیہ پن کی شکار بھارتی  فوج کے افسر  اپنے جوانوں کی ویڈیوز سے کچھ سیکھنے والے نہیں ۔ تیج بہادر یادیو سے لے کر جوگی داس تک سب ہی افسروں کی زیادتیوں کا رونا روتے نظر آئے لیکن ان کی فریاد پر معاملہ رسمی تحقیقات سے  آگے بڑھتا نظرنہیں آرہا۔