Friday, December 9, 2022

این سی اے برطانیہ نے پاکستانی شخصیت سے 190 ملین پاؤنڈ کی سیٹلمنٹ کر لی

این سی اے برطانیہ نے پاکستانی شخصیت سے 190 ملین پاؤنڈ کی سیٹلمنٹ کر لی
 لندن (92 نیوز) نیشنل کرائم ایجنسی (این سی اے) برطانیہ نے بڑی کارروائی کرتے ہوئے پاکستانی شخصیت  سے 190 ملین پاؤنڈ کے اثاثوں پر سیٹلمنٹ کر لی ۔ ریاست پاکستان کے لئے ایک اور خوشخبری آ گئی۔ بیرون ملک غیرقانونی طریقوں سے پہنچائی گئی دولت پاکستان واپس آنا شروع ہو گئی۔ غیر قانونی دولت کے حوالے سے تحقیقات کرنے والی برطانیہ کی نیشنل کرائم ایجنسی نے تصدیق کی ہے کہ پاکستان کی معروف کاروباری شخصیت نے 190 ملین پاؤنڈ واپس کرنے پر رضامند ظاہر کر دی ہے اور یہ خطیر رقم ریاست پاکستان کو واپس کر دی جائے گ۔ نیشنل کرائم ایجنسی کی جانب سے جاری پریس ریلیز کے مطابق اگست 2019 میں ویسٹ منسٹر مجسٹریٹ کی عدالت نے 8 اکاؤنٹس کو منجمد کرنے کا حکم دیا تھا۔ ان اکاؤنٹس میں مجموعی طور پر 120 ملین پاؤنڈز کے فنڈز موجود تھے۔ اس سے قبل اس کیس میں ہونے والی تحقیقات کے نتیجے میں دسمبر 2018 میں 20 ملین پاؤنڈز کو منجمد کرنے کا حکم بھی جاری کیا گیا تھا۔ ان تمام عدالتی احکامات کے تحت وہ رقم منجمد کی گئی جو برطانوی بینک اکاؤنٹس میں تھی۔ برطانوی نیشنل کرائم ایجنسی نے 190 ملین پاؤنڈز کی واپسی کی پیش کش قبول کر لی ہے۔ منجمد کیے جانے والے بینک اکاؤنٹس میں موجود رقم کے علاوہ مرکزی لندن کے علاقے میں واقع ون ہائیڈ پارک پلیس نامی عمارت کا ایک اپارٹمنٹ بھی شامل ہے جس کی مالیت پانچ کروڑ پاؤنڈ کے لگ بھگ ہے۔ یہ تمام جائیداد پاکستان کی حکومت کو منتقل کر دی جائے گی۔