Wednesday, November 30, 2022

این اے122 : پی ٹی آئی کے ووٹوں کی منتقلی کے الزامات مسترد

این اے122 : پی ٹی آئی کے ووٹوں کی منتقلی کے الزامات مسترد
اسلام آباد(92نیوز)این اے 122 لاہور ضمنی انتخابات کے دوران ووٹوں کی منتقلی کے حوالے سے تحریک انصاف کے الزامات مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ  ووٹرز کی مرضی کے بغیر ووٹ منتقل نہیں کیا جا سکتا،اس حوالے سے تمام ریکارڈ رجسٹریشن آفس میں موجود ہے۔ تفصیلات کےمطابق الیکشن کمیشن نے این اے 122میں ووٹوں کی تبدیلی سے متعلق پی ٹی آئی کے تمام الزامات کو مسترد  کرتے ہوئے کہا ہے  کہ تحریک انصاف کے ہرقسم کے الزامات کا جواب دینے کے لئے تیا رہیں۔ حلقہ میں ضمنی انتخاب کیلئے پہلے ہی ووٹرز فہرستیں جاری کردی گئی تھیں ترجمان الیکشن کمیشن کا کہنا ہے کہ الیکٹورل ایکٹ 1974 کے سیکشن 18 کے تحت ووٹوں کی تبدیلی کاطریقہ کار موجود ہے ووٹر کی مرضی کے بغیر اسکا ووٹ تبدیل نہیں کیاجاسکتا، اگر ایک حلقہ سے دوسرے حلقہ میں ووٹ تبدیل کیا جاتا ہے تو الیکشن آفیسر کے سامنے ووٹر کا جانا ضروری ہے،الیکشن کمیشن کا کہنا ہے کہ الیکشن کمیشن ہرقسم کے الزامات کا جواب دینے اورتحریک انصاف کو ہرطرح کا مواد فراہم کرنے کے لئے تیار ہے ۔اس سے پہلے بھی تحریک انصاف کی درخواست پر انہیں ریکارڈ فراہم کیا گیا ہے۔ الیکشن کمیشن ترجمان نے واضح کیا کہ 2013ء کے عام انتخابات میں حلقہ این اے 122میں 3لاکھ 26ہزار 28رجسٹرڈ ووٹرز تھے ضمنی انتخاب میں تین لاکھ 47ہزار 762ووٹرز تھے حلقہ جبکہ میں عام انتخابات کے بعد21ہزار 734ووٹر ز کا اضافہ ہوا،،تحریک انصاف کی تسلی اور اطمینان کے لیے تمام ریکارڈ فراہم کرنے کو تیار ہیں۔