Monday, December 5, 2022

ایل این جی اسکینڈل ، شاہد خاقان کے جوڈیشل ریمانڈ میں 16 دسمبر تک توسیع

ایل این جی اسکینڈل ، شاہد خاقان کے جوڈیشل ریمانڈ میں 16 دسمبر تک توسیع
اسلام آباد ( 92 نیوز) ایل این جی اسکینڈل میں احتساب عدالت نے شاہد خاقان عباسی کے جوڈیشل ریمانڈ میں  16 دسمبر تک توسیع دے دی ۔ نیب نے احتساب عدالت میں ریفرنس دائر کر دیا۔ ایل این جی کیس کی سماعت احتساب عدالت کے جج محمد بشیر نے کی ، شاہد خاقان عباسی اورمفتاح اسماعیل کواڈیالہ جیل سے پیش کیا گیا ، عدالت نے دونوں ملزمان کے جوڈیشل ریمانڈ میں 16 دسمبر تک توسیع کردی۔ نیب راولپنڈی نے شاہد خاقان عباسی سمیت 9 ملزمان کےخلاف اختیارات کے غلط استعمال کاریفرنس دائر کر دیا ، جس میں کہا گیا کہ ایک کمپنی کو 21 ارب روپے سے زائد کا فائدہ پہنچانے کا الزام  عائد کیا گیا ، عدالت نے شاہد خاقان عباسی اورمفتاح اسماعیل کے جوڈیشل ریمانڈ میں 16 دسمبر تک توسیع کردی۔ سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی اور سابق وزیرخزانہ مفتاح اسماعیل کے گرد نیب کا گھیرا تنگ ہو گیا ،  سیکرٹری اور ایم ڈی پٹرولیم گواہ بن گئے ، نیب راولپنڈی نے ایل این جی کیس میں میں ریفرنس دائر کردیا۔ موجودہ چیئرپرسن اوگرا عظمیٰ عادل اور سابق ایم ڈی پی ایس او عمران الحق سمیت 9 ملزمان نامزد ہیں ،  ایک کمپنی کو مارچ 2015 سے ستمبر 2019 تک 21 ارب روپے سے زائد کا فائدہ پہنچانے کا الزام عائد کیا گیا۔ ریفرنس میں کہاگیا کہ 2029تک قومی خزانے کو مجموعی طور پر 47ارب روپے کا نقصان ہو گا ، معاہدے سے عوام پر گیس بل کی مد میں 15سال کے دوران 68ارب روپے سے زائد کا بوجھ پڑے گا ۔ ملزمان نے  الزامات کی تردید کردی ،عدالت کی اجازت پر شاہد خاقان عباسی کی اہلخانہ اور لیگی رہنماؤں سے ملاقات کرائی گئی۔ ادھر رجسٹرار حتساب عدالت نے ریفرنس پر اعتراض عائد کر کے نیب کو واپس  دےدیا ، اعتراض عائد کیا گیا کہ   ریفرنس کی دستاویزات ترتیب سے نہیں لگائی گئیں۔