Friday, January 28, 2022
براہراست ٹی وی براہراست نشریات(UK) آج کا اخبار English News
English News آج کا اخبار
براہراست ٹی وی براہراست نشریات(UK)

اٹھارہ سال سے مقدمات کیوں زیرالتواہیں ، جےآئی ٹی کےچیئرمین نیب سے 14 سوال

اٹھارہ سال سے مقدمات کیوں زیرالتواہیں ، جےآئی ٹی کےچیئرمین نیب سے 14 سوال
July 13, 2017

اسلام آباد(92نیوز)شریف خاندان کےخلاف مقدمات 18سال سے کیوں زیر ا لتواءہیں؟؟جے آئی ٹی نے چیئرمین نیب قمر زمان چوہدری سے 14 سوالات پوچھ لئے ۔

تفصیلات کےمطابق چیئرمین نیب نے جےآئی ٹی میں بتایا کہ جب چارج سنبھالا تو شریف خاندان کےخلاف 21مقدمات زیرالتواءتھے۔ نظرثانی کمیٹی کی تحقیقات کے بعد مقدمات کی تعداد 9رہ گئی چیئرمین نیب قمرالزمان چوہدری نے جے آئی ٹی کو شریف خاندان کے مقدمات کی ساری تفصیلات بتائیں لیکن بعض کے بارے انہوں نے لاعلمی کا اظہار کیا۔

جے آئی ٹی کی رپورٹ کے مطابق چیئرمین نیب نے اپنے بیان میں اس بات کی تصدیق کی کہ جب وہ آئے اس وقت تک شریف خاندان کےخلاف کئی مقدمات نامکمل تھے۔ جے آئی ٹی نے چیئرمین نیب سے پوچھا کہ نیب کے قواعد کے مطابق مقدمات مکمل کرنے میں دس ماہ لگتے ہیں لیکن شریف خاندان کے خلاف اٹھارہ سالوں سے مقدمات کیوں زیر التواءہیں؟؟ایوان فیلڈ جائیداد سے متعلق کیس 2000ءمیں بنا کیا فریقین کو نوٹسز جاری کئے؟؟چیئرمین نیب نے کہا کہ ریکارڈ کے مطابق اس جائیداد کے مالکان کو نوٹس جاری نہیں ہوئے۔ قانونی معاونت سے متعلق سوال پر چیئرمین نیب کاکہنا تھا کہ معلومات ہونے پر وہ کچھ نہ کرسکے۔ انہوں نے یہ بھی بتایا کہ ریکارڈ کے مطابق نیب حکام شریف خاندان سے رابطے میں نہیں تھا ۔ چیئرمین نیب کا یہ بھی کہنا تھا کہ شریف ٹرسٹ کیس 2015ءمیں دوبارہ کھولا گیا ۔اس حوالے سے متعلقہ اداروں سے معلومات لی جا رہی ہیں۔اکاؤنٹنٹ نے بتایا کہ1999ءمیں فوج یہ ریکارڈ ساتھ لے گئی۔ چیئرمین نیب نے کلثوم ٹرسٹ ۔التوفیق ۔البرکہ اورحدیبیہ انجینئرنگ کیس سے متعلق لاعلمی کااظہار کیا۔عبدالغنی ٹرسٹ کے حوالے سے بھی چیئرمین نیب نے بس اتنا کہا کہ وہ چیک کرکے بتائیں گے۔

نوازشریف کےخلاف ہیلی کاپٹر کیس کی بات ہوئی تو کہنے لگے کہ یہ مقدمہ ان کے دور کانہیں۔  چیئرمین نیب نے یہ بھی بتایا کہ شریف ٹرسٹ کیس میں شریف خاندان پرکروڑوں روپے لینے کا الزام ہے۔ نواز شریف کیخلاف ایف آئی اے میں بھرتیوں سے متعلق کیس آخری مراحل میں ہے۔