Saturday, October 16, 2021
English News آج کا اخبار براہراست نشریات(UK) براہراست ٹی وی
English News آج کا اخبار
براہراست نشریات(UK) براہراست ٹی وی

امن کا نوبل انعام تیونس میں جمہوریت کیلئے کام کرنیوالی چار تنظیموں کے نام

امن کا نوبل انعام تیونس میں جمہوریت کیلئے کام کرنیوالی چار تنظیموں کے نام
October 10, 2015
تیونس سٹی (ویب ڈیسک) پوپ فرانسس یا جرمن چانسلر اینجلا مرکل نہیں امن کا نوبل انعام تیونس کی چار تنظیموں کے اتحاد کو مل گیا۔ تیونسی اتحاد کو امن کا نوبل انعام ملک میں کثیرجہتی جمہوریت کی تعمیر کے لیے فیصلہ کن کردار ادا کرنے پر دیا گیا۔ تفصیلات کے مطابق دو ہزار پندرہ کاامن کا نوبل انعام ملک میں جمہوریت کی جانب منتقلی میں خدمات کے صلے میں تیونس کی چار تنظیموں کے اتحاد ”تیونسین ڈائیلاگ کوارٹٹ“ کو دیا گیا ہے۔ انعام کا اعلان کرتے ہوئے نوبل کمیٹی کی سربراہ کیسی کلمین نے کہا کہ اس اتحاد نے دو ہزار گیارہ کے انقلاب کے بعد ملک میں کثیرجہتی جمہوریت کی تعمیر کے لیے فیصلہ کن کردار ادا کیا۔ اس برس امن کے نوبل انعام کے لیے 273 امیدواروں کے نام زیرغور تھے جن میں پوپ فرانسس اور جرمن چانسلر اینجلا مرکل بھی شامل تھیں۔ تیونسی اتحاد میں تیونس جنرل لیبر یونین، تیونس کنفیڈریشن آف انڈسٹری ٹریڈ اینڈ ہینڈی کرافٹس، تیونس ہیومن رائٹس لیگ اور تیونس آرڈر آف لائرز شامل ہیں۔ نوبل کمیٹی کی سربراہ نے کہا کہ تیونس میں دو ہزار تیرہ میں جمہوریت کا عمل سیاسی قتل و غارت اور بڑے پیمانے پر پھیلے سماجی انتشار کی وجہ سے خطرے میں تھا لیکن اس چار رکنی اتحاد نے ملک کو خانہ جنگی کے دہانے سے نکال کر پرامن سیاسی عمل کی جانب گامزن کر دیا۔ پچھلے سال یہ انعام تعلیم کے لیے مہم چلانے والی پاکستان کی ملالہ یوسف زئی اور بھارت میں بچوں کے فلاح کے لیے کام کرنے والے کیلاش ستیارتھ کو مشترکہ طور پر دیا گیا تھا۔
تازہ ترین خبریں حاصل کرنے کے لیے فوری اطلاع کی اجازت دیں

آپ کسی بھی وقت دائیں طرف نیچے بیل آئیکن پر صرف ایک کلک کے ذریعے آسانی سے سبسکرائب کر سکتے ہیں۔