Wednesday, January 19, 2022
براہراست ٹی وی براہراست نشریات(UK) آج کا اخبار English News
English News آج کا اخبار
براہراست ٹی وی براہراست نشریات(UK)

امریکی سینیٹ کے5رکنی وفد کا آرمی چیف کے ہمراہ جنوبی وزیرستان کا دورہ

امریکی سینیٹ کے5رکنی وفد کا آرمی چیف کے ہمراہ جنوبی وزیرستان کا دورہ
July 3, 2017

 

راولپنڈی(92نیوز)امریکی ہرزہ سرائیاں ، پاکستان کو دہشتگردی پھیلانے والا ملک قرار دینا اور ٹرمپ کے ڈو مور کے مطالبے ۔امریکی سینیٹرز کے قبائلی علاقہ جات کے دورے سے ہی ہوا میں اُڑ گئے۔ بری فوج کے سربراہ جنرل قمر جاوید باجوہ کے ہمراہ امریکی سینیٹ کی آرمڈ سروسز کمیٹی کے اراکین نے جنوبی وزیرستان کا دورہ کیا۔ سینیٹر جان مکین کی قیادت میں امریکی وفد وانا، جنوبی وزیرستان پہنچا تو کور کمانڈر پشاور لیفٹیننٹ جنرل نذیر احمد بٹ نے آرمی چیف اور امریکی وفد کا استقبال کیا۔۔

ڈی جی آئی ایس پی آر کے مطابق امریکی وفد کو پاک افغان سرحدی سلامتی کی صورتحال، باڑ لگانے ، کڑی نگرانی کے اُموراورفاٹا کی ترقی کیلئے جاری منصوبوں پرتفصیلی بریفنگ دی گئی ۔ امریکی سینیٹر زنے پاک افغان سرحد کا فضائی جائزہ لیا اُنہیں سرحد پر نوتعمیر شدہ چوکیاں اور قلعے دکھائے گئے۔ امریکی سینیٹر ز نے دہشتگردی کا شکار علاقوں میں ترقی و استحکام اپنی آنکھوں سے دیکھا اور خطے میں دیرپا امن و استحکام کیلئے امریکہ ، پاکستان اورافغانستان کے مابین تعاون کو ناگزیر قرار دیا۔  سینیٹر جان مکین کا کہنا تھا کہ میرے ساتھیوں اور میراانتہائی معلوماتی اور اہم دورہ ہے ہمیں چیلنجز، کامیابیوں اور موجودچیلنجز کو سمجھنے کا موقع ملا،اِس صورتحال میں امریکہ کی جانب سے اور باہمی سطح پر قریبی تعاون کی ضرورت ہے۔ ہم نے بیشتر امور پر بات کی جن میں پاکستان اور افغانستان کے مابین تعلقات ، بہتر سرحدی انتظام کی اہمیت پر بھی گفتگو کی، ہمیں قوی اُمید ہے کہ درست حکمت عملی اور حقیقی تعاون سے ہم طویل جدوجہد میں کامیابی حاصل کریں گے۔

 امریکی سینیٹرزدہشتگردی کیخلاف پاک فوج کی کامیابیوں کے معترف ،ترقیاتی اُمور اور پاک افغان سرحدی انتظام سے متعلق زمینی حقائق دیکھ کر حیران تھے اور وفد کے اراکین نے واضح کہا کہ خطے نے دہشتگردی کو مسترد کر دیا ،اب امریکہ کو خطے کا ساتھ دینا ہوگا۔  امریکی سینیٹرز کا کہنا تھا کہ کبھی نہیں سوچا تھا کہ اکیلا جنوبی وزیرستان جاوں گا پر امن وزیرستان پر پاک فوج کو مبارکباد دیتا ہوں ۔

امریکی سینیٹر لنڈسے گراہم  کا کہنا تھا کہ گزشتہ چند سالوں میں بڑی کامیابی کی کہانی دراصل پاکستانی فوج کی قبائلی علاقوں کو بہتر کی جانب تبدیل کر نے کی ہے۔  میں اِس پر زور نہیں دیتا کہ میں خود کتنا متاثر ہوں یا گزشتہ دو سال میں کیا ہواتاہم پاک فوج اور اِس خطے کے عوام نے دہشتگردی کو مسترد کردیا اور اِس سلسلے میں اب کوئی واپس مڑ کر دیکھنے کو تیار نہیں اور اب یہ ہم پر منحصر ہے کہ دہشتگردی اِس خطے میں واپس نہ آئے۔

امریکی سینیٹر الزبتھ وارن نے کہا کہ ہم نے جانا کہ پاکستان کس طرح انسداد دہشتگردی کی جنگ میں صف اول کا ملک ہے او رپاکستان کیساتھ اشتراک کتنا اہم ہے اور یہی ہماری کامیابی کا واحد راستہ ہے۔۔

آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے دورہ پاکستان پرامریکی وفد کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ فاٹا کی معاشی و سماجی ترقی کیلئے امریکی تعاون کو سراہتے ہیں۔ آئی ایس پی آر کے مطابق امریکی وفدکا کنٹرول لائن کا طے شدہ دورہ خراب موسم کی وجہ سے نہ ہو سکا۔