Friday, February 23, 2024

امریکی انجیئنرز ںے 80 مرتبہ تحریر کے قابل جادوئی کاغذتیار کر لیا

 امریکی انجیئنرز ںے 80 مرتبہ تحریر کے قابل جادوئی کاغذتیار کر لیا
February 7, 2017
نیویارک (ویب ڈیسک) امریکی انجینئروں نے ایسا انوکھا کاغذ تیار کیا ہے جس پر لکھنے کیلئے الٹراوائلٹ روشنی اور مٹانے کیلئے حرارت استعمال کی جاتی ہے اور اس پر بار بار 80 مرتبہ لکھا جاسکتا ہے۔ تفصیلات کےمطابق یونیورسٹی آف کیلیفورنیا، ریورسائیڈ کے پروفیسر یاڈونگ یِن اور ان کے ساتھیوں کے تیار کردہ کاغذ میں سالڈ سٹیٹ فوٹو ریورسیبل کلر سوئچنگ سسٹم استعمال کیا گیا ہے جو دیکھنے اور چھونے پر عام کاغذ جیسا دکھائی دیتا ہے۔ اسے کسی بھی سیاہی کے بغیر بار بار صاف کر کے لکھا جا سکتا ہے۔ اس طرح کاغذوں کیلئے درخت کاٹنے کے عمل کو بہت حد تک کم کر کے ماحول کو بہتر بنایا جاسکتا ہے۔ عام کاغذ کو ری سائیکل کرنے کے عمل میں آلودگی ختم نہیں ہوتی کیونکہ اس پر لگی روشنائی کیمیکل پر مشتمل ہوتی ہے اور وہ ماحول کا حصہ بن جاتی ہے۔ اس جادوئی کاغذ پر دو اقسام کی پرت لگائی گئی ہے۔ ایک نیلا رنگ ہے جو اس وقت تک نظر نہیں آتا جب تک اس پر الیکٹران نہ ڈالے جائیں۔ دوسری پرت ٹیٹانیئم آکسائیڈ کی ہے جو الٹراوائلٹ روشنی پڑنے پر کیمیائی عمل کو تیز کرتی ہے جب ان دونوں پرتوں کو ملاکر کاغذ پر لگایا جاتا ہے تو وہ نیلا ہوجاتا ہے۔ کاغذ پر الٹراوائلٹ (بالائے بنفشی) روشنی ڈالی جائے تو ذرات سرگرم ہو کر تصویر یا الفاظ کی صورت اختیار کرتے ہیں کیونکہ اس عمل سے الیکٹران خارج ہوتے ہیں اور نیلی سیاہی پر اثرانداز ہوتے ہیں۔ اسی طرح کاغذ پر نیلے پس منظر میں سفید تحریر بھی نقش کی جا سکتی ہے۔ کاغذ پر موجود لکھائی 5 روز بعد بتدریج دھندلی ہونے لگتی ہے لیکن اگر کاغذ کو 120 ڈگری سینٹی گریڈ پر گرم کیا جائے تو دس منٹ میں لکھائی یا تصویر غائب ہو جائیگی۔