Monday, December 6, 2021
English News آج کا اخبار براہراست نشریات(UK) براہراست ٹی وی
English News آج کا اخبار
براہراست نشریات(UK) براہراست ٹی وی

الیکشن کمیشن نے سینیٹ انتخابات پر وزیراعظم کی تنقید مسترد کر دی

الیکشن کمیشن نے سینیٹ انتخابات پر وزیراعظم کی تنقید مسترد کر دی
March 5, 2021

اسلام آباد (92 نیوز) الیکشن کمیشن آف پاکستان نے سینیٹ انتخابات پر وزیر اعظم کی تنقید مسترد کر دی۔

الیکشن کمیشن آف پاکستان میں وزیراعظم کے الیکشن کمیشن سے متعلق بیان پر خصوصی اجلاس کے بعد جاری اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ ہر سیاسی جماعت اور شخص میں شکست تسلیم کرنے کا جذبہ ہونا چاہیے۔ وفاقی کابینہ کے اراکین کے میڈیا کے ذریعے جو بیانات سامنے آئے اور وزیر اعظم کا خطاب سن کر دکھ ہوا ۔ جس رزلٹ پر تبصرہ اور ناراضگی کا اظہار کیا گیا ہے الیکشن کمیشن اس کو مسترد کرتا ہے ۔ الیکشن کمیشن ایک آئینی اور آزاد ادارہ ہے۔ یہی جمہوریت اور آزادانہ الیکشن اور خفیہ بیلٹ کا حسن ہے جو پوری قوم نے دیکھا اور یہی آئین کی منشاء تھی۔

 اعلامیے میں کہا گیا ہمیں کام کرنے دیں۔ ملکی اداروں پر کیچڑ نہ اچھالیں، کچھ تو احساس کریں، اگر کسی کو الیکشن کمیشن کے احکامات اور فیصلوں پر اعتراض ہے تو وہ آئینی راستہ اختیار کریں ، اگر کہیں اختلاف ہے تو شواہد کے ساتھ آ کر بات کریں۔ آپ کی تجاویز  سن سکتے ہیں تو شکایات کیوں نہیں۔ ہمیں آزادانہ طور پر کام کرنے دیا جائے اور کسی کے دباو میں نہیں آئیں گے۔ الیکشن کمیشن نے تمام فریقین کو سنا اور انکی تجاویز کا جائزہ لیا۔ حیران کن بات ہے کہ ایک ہی روز ایک ہی چھت کے نیچے ایک ہی الیکٹرول میں ایک ہی عملہ کی موجودگی میں جو ہار گئے وہ نامنظور جو جیت گئے وہ منظور، کیا یہ کھلا تضاد نہیں؟ جبکہ باقی تمام صوبوں کے رزلٹ قبول ہیں۔

اعلامیے کے مطابق الیکشن کمیشن آئینی ذمہ دارایاں قانون اور آئین کی بالادستی کے لیے کام سرانجام دیتا رہے گا۔ الیکشن کمیشن کا کام قانون سازی نہیں ہے بلکہ قانون کی پاسبانی ہے۔ الیکشن کمیشن سب کی سنتا ہے مگر وہ صرف اور صرف آئین وقانون کی روشنی میں ہی اپنے فرائض سرانجام دیتا ہے۔ سینیٹ انتخابات خوش اسلوبی سے انجام کو پہنچے۔ سینیٹ الیکشن آئین اور قانون کے مطابق کروانے پر اللہ کے شکر گزار ہیں۔ آئین اور قانون کیا اجازت دیتا ہے وہ اسکا معیار ہے۔ ہم کسی کی خوش اسلوبی کے لیے قانون کو نظر انداز نہیں کرسکتے۔ اگر اسی طرح آئینی اداروں کی تضحیک کی جاتی رہی تو یہ الیکشن کمیشن کی بجائے ان کی کمزوری کے مترادف ہے۔