Wednesday, January 19, 2022
براہراست ٹی وی براہراست نشریات(UK) آج کا اخبار English News
English News آج کا اخبار
براہراست ٹی وی براہراست نشریات(UK)

العزیزیہ، ایون فیلڈ ضمنی ریفرنسز، فونٹ سےمتعلق رابرٹ ریڈلے پر وکلا کی جرح مکمل

العزیزیہ، ایون فیلڈ ضمنی ریفرنسز، فونٹ سےمتعلق رابرٹ ریڈلے پر وکلا کی جرح مکمل
February 23, 2018

اسلام آباد (92 نیوز) احتساب عدالت اسلام آباد میں شریف فیملی کے خلاف نیب ریفرنسز پر سماعت جج محمد بشیر نے کی۔ نواز شریف، مریم نواز اور  کیپٹن (ر) صفدر بھی پیش ہوئے۔

 نوازشریف کے وکیل خواجہ حارث نے دوسرے روز بھی غیرملکی گواہ رابرٹ ریڈلے جرح کی۔ خواجہ حارث نے پوچھا کہ کیا یہ بات درست ہے کہ کیلیبری فونٹ کے خالق کو آئی ٹی میں مثبت خدمات پر ایوارڈ دیا گیا تھا؟ جس پر گواہ نے کہا کہ یہ بات درست ہے کہ 2005 میں اس کی خدمات پر ایوارڈ سے نوازا گیا تھا۔ کیبلری فونٹ کے حوالے سے رابرٹ ریڈلے نے بتایا کہ آئی ٹی کا ماہر ونڈو وسٹا بیٹا سے کیلیبری فونٹ ڈاونلوڈ کر سکتا تھا ۔ رپورٹ تیکنیکی بنیادوں پر تھی اس لیے ذکر نہیں کیا۔

رابرٹ ریڈلے کے جرح کے لیے تیار کردہ نکات خواجہ حارث کے حوالے کے کئے گئے جبکہ نیب پراسیکیوٹر عمران شفیق نے ان نکات کو بھی عدالتی ریکارڈ کا حصہ بنانے کی استدعا کی۔سماعت کے دوران نیب پراسیکیوٹر اور خواجہ حارث کے درمیان تلخ جملوں کا تبادلہ بھی ہوا۔

مریم نوازکے وکیل امجد پرویز نے جرح کرتے ہوئے پوچھا کہ آپ کی رپورٹ میں کوئی انڈکس نہیں ہے جس پر گواہ نے بتایا یہ درست ہے کوئی انڈکس موجود نہیں ۔امجد پرویز نے پوچھا کہ رپورٹ کے کے لئے آپ کو جو ہدایت نامہ ملا اس کی تاریخ درج نہیں ۔

رابرٹ ریڈلے نے بتایا کہ رپورٹ میں نہیں لکھا کہ کب کام کا آغاز کیا۔ رپورٹ میں دستاویزات کے وصول کنندہ کے بارے میں نہیں لکھا ،سیل کس نے کھولی ، نہیں لکھا سیل لفافے پر کوئی پتہ درج تھا یا نہیں یہ یاد نہیں۔

استغاثہ کے دوسرے غیر ملکی گواہ راجا  اخترحسین  نے جرح کے دوران بتایاکہ 12 مئی 2017 کو جے آئی ٹی نے ان کی خدمات حاصل کیں۔ سپریم کورٹ میں جمع کرائی گئی کاپیاں بنڈل کی شکل میں وصول کیں نیسکول اور نیلسن کا ٹرسٹ ڈیکلیریشن بھی دیا گیا۔ گواہ نے بتایا کہ انھوں نے بنڈل میں بہت سی بے ضابطگیاں محسوس کیں ۔ان کاغذات میں رد و بدل کیا گیا تھا۔