Wednesday, October 5, 2022

افسوس ہے وفاقی حکومت سندھ کے لوگوں کو الگ نظر سے دیکھ رہی ہے، مراد علی شاہ

افسوس ہے وفاقی حکومت سندھ کے لوگوں کو الگ نظر سے دیکھ رہی ہے، مراد علی شاہ
 کراچی (92 نیوز) وزیر اعلیٰ مراد علی شاہ کا کہنا ہے دوسرے صوبوں میں 24 گھنٹے کے اندر افسر تبدیل ہوجاتے ہیں۔ افسوس ہے وفاقی حکومت سندھ کے لوگوں کو الگ نظر سے دیکھ رہی ہے۔ مراد علی شاہ نے کہا سندھ کابینہ نے آئی جی کو ہٹانے کا فیصلہ کیا، وزیراعظم نے بھی اتفاق کیا۔ کوآرڈینیشن نہ ہونے کی وجہ سے بدامنی پھیلی ہے۔ انہوں نے کہا رکن سندھ اسمبلی اور ایک صحافی کا قتل ہوا ہے۔ ملوث افراد کو پکڑنا پولیس کا کام ہے۔ آئی جی پولیس کے سربراہ ہیں۔ پولیس میں لیڈر شپ نہیں کہ یہ کام کرسکے۔ وزیر اعلیٰ مراد علی شاہ کا کہنا تھا عوام بے روزگاری اور مہنگائی کے طوفان تلے دبے ہوئے ہیں۔ اپوزیشن لیڈر کا ملک میں ہونا ضروری ہے۔ اپوزیشن لیڈر قومی اسمبلی کے حالیہ اجلاس میں موجود نہیں تھے۔ بلاول بھٹو نے عوام کی نمائندگی کرتے ہوئے قومی اسمبلی میں حقیقت بتائی۔ عوامی مسائل سامنے لانے پر بلاول بھٹو زرداری کی کردار کشی کی گئی۔ شہید ذوالفقارعلی بھٹو کو حکومت ملی تو معاشی حالات بالکل خراب تھے۔ اس کے باوجود وہ عوام میں خوشحالی لے کر آئے۔ موجودہ حکمرانوں کو کہا جاتا ہے کہ عوامی مسائل ہیں تو وہ برا بھلا کہنا شروع کردیتے ہیں۔ ایسی مہنگائی اور ایسے حالات پاکستان کی تاریخ میں کبھی نہیں ہوئے۔